Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق سے افغان صدر اشرف غنی کے خصوصی نمائندہ عمردائود زئی کی ملاقات


لاہور11جنوری 2019ء:    امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق سے افغان صدر اشرف غنی کے خصوصی نمائندہ سابق افغان سفیر عمر دائود زئی نے وفد کے ہمراہ اسلام آباد میں ملاقات کی ۔ملاقات میں نائب امیر جماعت اسلامی میاں محمد اسلم اور شبیر احمد خان بھی موجود تھے ۔ملاقات میں خطے کی صورتحال خاص طور پرپاک افغان تعلقات میں مزید بہتری لانے پر گفتگو ہوئی ۔
     سینیٹر سراج الحق نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پر امن افغانستان علاقائی امن اور پاکستان کیلئے ضروری ہے ۔افغانستان میں امن کی کنجی خود افغانوں کے ہاتھ میں ہے ۔اقتصادی ترقی کیلئے بھی پاک افغان دوستی ضروری ہے ۔افغانستان میں امن کیلئے افغان حکومت اور تمام اپوزیشن جماعتوں کے درمیان مذاکرات ہونے چاہئیں ۔افغان حکومت اپوزیشن جماعتوں کو اعتماد میں لے ۔پرامن افغانستان پاکستان کے مفاد میں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور افغانستان اسلام کے لازوال رشتے میں بندھے ہوئے ہیں ،ہمارا نفع و نقصان ایک ہے ۔پاکستان کا امن افغانستان کے امن سے مشروط ہے اس لئے پاکستان چاہتا ہے کہ افغانستان میں جلد ازجلدامن قائم ہو۔انہوں نے کہا کہ پاکستان افغانستان میں پائیدار امن کیلئے افغان راہنمائوں کے درمیان مذاکرات کا حامی ہے ۔امریکہ افغانوں کو مل بیٹھ کر اپنے معاملات حل کرنے دے اور جلد ازجلد افغانستان سے فوجی انخلاء کو مکمل کرے ۔انہوں نے کہا کہ افغانستان کے مسئلے کا حل افغان عوام پر چھوڑ دیا جائے ۔افغانوں کے درمیان مذاکرات میں مداخلت سے یہ مذاکرات باربار تعطل کا شکار ہوجاتے ہیں ۔
    اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے سابق افغان سفیر عمر دائود زئی نے افغان مسئلے کے حل کیلئے پاکستان کی کوششوں کا خیر مقدم کیا اور کہا کہ پاکستان نے ہمیشہ افغانستان کے عوام سے اخوت ،بھائی چار ے اور ہمدردانہ رویے کا اظہار کیا ہے ۔افغانستان کے عوام پاکستان کے ساتھ اچھے اور برادرانہ تعلقات کے خواہاں ہیں ۔عمردائودزئی نے افغانستان میں قیام امن کیلئے جماعت اسلامی کے کردار کی بھی تعریف کی اور امید ظاہر کی کہ افغانستان کو پاکستان کا تعاون ہمیشہ حاصل رہے گا۔    

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس