Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

تبدیلی کا خواب دکھانے والے حکمران عوام کی فلاح و بہبود کے لیے عملی اقدامات کریں۔امیرالعظیم


لاہور10 جنوری2019ء:امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب امیر العظیم نے کہا ہے کہ آئی بی پیز کے ساتھ کیے گئے تمام معاہدوں کو قوم کے سامنے لایا جائے۔ نجی پاور پلانٹس کو 159ملین روپے فی کس زائد ادائیگی کس قانون کے تحت کی گئی؟ اس کی بھی وضاحت کی جانی چاہیے۔ ایک طر ف عوام کو بجلی دستیاب نہیں اور وہ سراپا احتجاج ہیں، صنعتیں بند اور مزدور بے روزگار ہورہے ہیں، گردشی قرضہ بڑھ چکا ہے تو دوسری طرف ان کمپنیوں کو بلا تعطل قومی خزانے سے ادائیگیاں کی جارہی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے گزشتہ روزتقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ عوام کے خون پسینے کی کمائی کو دونوں ہاتھوں سے لوٹا یا جارہا ہے۔ توانائی بحران کی آڑ میں کرپٹ افراد نے اپنی تجوریوں کو بھرا ہے۔ حکمرانوں سمیت کسی کو بھی عوام کے مسائل اور ان کے حل سے کوئی سروکار نہیں۔ موسم سرما میں گھنٹوں پر محیط لوڈ شیڈنگ کا دورانیہ ناقابل فہم ہے ۔ موجودہ حکمرانوں نے بھی عوام کے جذبات کو مجروح کرنے کے سوا کچھ نہیں کیا۔انھوں نے کہا کہ توانائی کے بحران سے ہزاروں صنعتی یونٹس بند اور لاکھوں مزدور بے روز گار ہوچکے ہیں، ان کے گھروں میں نوبت فاقوں تک پہنچ چکی ہے۔ بجلی کاشارٹ فال پہلے سے بڑھ گیا ہے۔ توانائی بحران سے نجات کے لیے نہ ماضی میں حکمرانوں نے کچھ کیا اور نہ ہی موجودہ حکمران کچھ کررہے ہیں۔انھوں نے کہاکہ ماضی کے منافع بخش ادارے اب قومی خزانے پر بھاری بوجھ بن چکے ہیں۔ ہر ادارے میں کرپشن اور بد عنوانی کی لمبی داستانیں دکھائی دیتیں ہیں۔آئے روز اسکینڈلز سامنے آرہے ہیں۔قومی اداروں کو بہتراورفعال بنانے کے لیے ضروری ہے کہ ان سے کالی بھیڑوں کو فی الفور نکالا جائے۔ امیر العظیم نے مزید کہا کہ ملک و قوم اس وقت سنگین بحران سے دوچار ہے۔ موجودہ حالات کو دیکھ کر عوام میں مایوسی پھیلتی چلی جارہی ہے۔ ہر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والا شخص پریشان ہے۔ تبدیلی کا خواب دکھانے والے حکمران عوام کی فلاح و بہبود کے لیے عملی اقدامات کریں۔ 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس