Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

ر وپے کی قدر میں کمی سے ملک میں معاشی بحران جنم لے چکا ہے، مہنگائی میں بے پناہ اضافہ ہوگیا ہے۔امیرالعظیم


لاہور7 جنوری 2018ء:امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب امیر العظیم نے کہا ہے کہ ر وپے کی قدر میں کمی سے ملک میں معاشی بحران جنم لے چکا ہے اورغیر ملکی قرضوں کی ادائیگی پر شیڈول کے مطابق عمل در آمد ممکن نہیں رہا۔ مہنگائی اور بے روزگاری میں بے پناہ اضافہ ہوچکا ہے۔ رہی سہی کسر حکمرانوں کے غیر دانشمندانہ اقدامات نے پوری کردی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے گزشتہ روز منصورہ میں عوامی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ جب تک سودی نظام معیشت جاری رہے گا تب تک پاکستان کے عوام خوشحال اور ملک معاشی ترقی نہیں کرسکتا۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ کلمہ طیبہ کے نام پر بننے والے پاکستان میں اسلامی طرز معیشت کو اختیار کیا جائے۔ سودی نظام کو اپنانے والے ممالک آج دیوالیہ ہورہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ سابق حکومتی ترجمان ڈاکٹر فرخ سلیم نے بھی انکشاف کیا ہے کہ روپے کی قدر میں کمی کے نتائج نہیں ملے، مہنگائی دوگنا ہوچکی ہے۔ اس سے اندازہ ہوتا ہے کہ حکمرانوں کے دعوے محض ریت کی دیوار ثابت ہوئے ہیں۔انھوں نے کہا کہ ماضی کے حکمرانوں کی طرح موجودہ حکمرانوں نے بھی کشکول تھام لیا ہے۔ خودمختاری اور خود انحصاری کا درس دینے والے آج سابقہ حکمرانوں کے نقش قدم پر چل رہے ہیں۔ موجودہ معاشی بحران سے نمٹنے کے لیے حکومت کو سنجیدگی سے کام لینا ہوگا۔ محض بیانات اور دکھاوے کے اقدامات سے تبدیلی کا خواب پورا نہیں ہوسکتا۔ جن لوگوں نے بہتری کی امیدمیں تحریک انصاف کو ووٹ دیا تھا آج وہ مایوس اور پریشان نظر آتے ہیں۔ انھوں نے کہاکہ حکومت موجودہ معاشی بحران سے نمٹنے کے لیے ٹھوس اور سنجیدہ منصوبہ بندی نہیں کررہی بلکہ ڈنگ ٹپاؤپالیسی پر عمل کیاجارہاہے۔25جولائی2018کوتحریک انصاف کی حکومت کے برسراقتدار آنے سے پاکستانی عوام یہ توقع کررہے تھے کہ ملک میں مہنگائی،غربت اور بیروزگاری کاخاتمہ ہوگا۔بجلی،گیس اور پٹرولیم کی قیمتوں میں کمی ہوگی لیکن چار ماہ گزرنے کے باوجودایسا نہیں ہوسکابلکہ میں ان اضافہ ہوا ہے۔اب لوگ پہلے سے زیاہ مشکل حالات برداشت کررہے ہیں۔امیر العظیم نے مزیدکہاکہ جب تک تحریک انصاف کی حکومت عوام کو حقیقی معنوں میں ریلیف دینے کے لیے سنجیدہ عملی اقدامات نہیں کرے گی اس وقت تک حالات نہیں سدھریں گے۔ہم امید کرتے ہیں کہ تحریک انصاف مسلم لیگ (ن) اور پیپلزپارٹی کی سابقہ حکومتوں کی غلطیوں کو نہیں دہرائی گی اورعوام کی مشکلات میں اضافے کی بجائے کمی لانے کے لیے بہتر حکمت عملی تیار کرے گی ۔ 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس