Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

قبائلی اضلاع کے عوام نے ایف سی آر کے خاتمہ اور آئینی ، عدالتی و بنیادی انسانی حقوق کے لیے لازوال قربانیاں دی ہیں۔لیاقت بلوچ


لاہور7جنوری2019ء:جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے باجوڑ ، مہمند اور خیبر پختونخوا کے اضلاع کے قائدین سے ملاقات کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ قبائلی اضلاع کے عوام نے ایف سی آر کے خاتمہ اور آئینی ، عدالتی و بنیادی انسانی حقوق کے لیے لازوال قربانیاں دی ہیں ۔ اس کا ثمر قبائلی علاقہ جات کو خیبر پی کے میں انضمام کی صورت میں مل گیا۔ قبائلی اضلاع کے عوام محب دین اور پاکستان کا مضبوط دفاعی حصار ہیں ۔

لیاقت بلوچ نے قبائلی علاقوں کے مسائل پرتشویش کا اظہارکرتے ہوئے کہاکہ انضمام کے بعد علاقہ جات کے عوام سے کیے گئے وعدے پورے نہیں ہورہے ۔ سرد مہری اور سست روی کا شکار ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ وفاقی حکومت اور ریاستی ادارے قبائلی اضلاع کی پسماندگی کے خاتمہ کے لیے 100 ارب روپے انفراسٹرکچر کی بحالی کے لیے جاری کریں ۔ قبائلی اضلاع میں قانونی خلا ختم کیا جائے ۔ صوبائی اسمبلی کی نشستوں اور بلدیاتی انتخابات کا عمل فوری طور پر شروع کیا جائے ۔ قبائلی عوام کو تمام دستوری ، تعلیمی ، معاشی حقوق کی فراہمی یقینی بنائی جائے ۔

لیاقت بلوچ نے کہاکہ تحریک انصاف کی حکومت کا المیہ یہ ہے کہ عوام کو ریلیف دینے کی کوئی ترجیحات نہیں ۔ان چھ ماہ میں عوام کے لیے مشکلات میں اضافہ ہوا ہے ۔ مہنگائی ، بے روزگاری ، ذلت و رسوائی بڑھ گئی ہے ۔ پارلیمنٹ اور صوبائی اسمبلیاں عوامی مسائل کے حل کے لیے کوئی روڈ میپ نہیں دے رہیں ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس