Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

غیر آئینی و غیر جمہوری اقدامات ، مینڈیٹ کو چرانااور ریاستی طاقت کے ساتھ تبدیل کرنا جمہوریت کے لیے زہر قاتل ہوگا۔لیاقت بلوچ


لاہور31دسمبر 2018ء:جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل اور سابق پارلیمانی لیڈر لیاقت بلوچ نے موجودہ حکومت کی 2018 ءکی کارکردگی کے حوالے سے مسلم ٹاﺅن میں میڈیا کو بریفنگ اور منصورہ میں مرکزی تربیت گاہ کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ موجودہ حکومت 2018 ءمیں نہ قانون سازی کر سکی اور نہ ہی عوام کے لیے ریلیف کی کوئی پالیسی وضع کر سکی ہے ۔ وزیراعظم عمران خان نے دعویٰ کیا تھاکہ وہ ہر ہفتے اسمبلی میں سوالات کے جواب دیں گے اس پوری مدت میں نوازشریف کی طرح وہ بھی اسمبلی میں نہیں آئے اسی طرح پارلیمانی سیاست کو بھی نقصان پہنچایا گیا ہے ۔ اس وقت وفاقی اور صوبائی حکومتیں ایک دوسرے کے مینڈیٹ پر ڈاکہ زنی کی تیاریاں کر رہی ہیں ۔ غیر آئینی و غیر جمہوری اقدامات ، مینڈیٹ کو چرانااور ریاستی طاقت کے ساتھ تبدیل کرنا جمہوریت کے لیے زہر قاتل ہوگا ۔کوئی بھی حکومت ریاستی طاقت سے دوسرے کے عوامی مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالتی ہے تو سیاسی جمہوری اور پارلیمانی عمل کو محفوظ رکھنا ممکن نہیں رہتا ۔ سندھ میں وفاقی حکومت کی عدم حکمت پورے نظام کے لیے واٹر لو ثابت ہوگا ۔ عمران خان اب سہاروں سے نہیں کارکردگی سے حکومت چلائیں ، غیر آئینی اقدام جمہوری نظام کے لیے مہلک ہوگا ۔انہوںنے کہاکہ حکومتی وزراءکام کرنے کی بجائے اعلانات اور دوسروں پر کیچڑ اچھالنے کے لیے میڈیاکا سہارا لے رہے ہیں ۔ 

لیاقت بلوچ نے کہاکہ ملک میں سوئی گیس کا بحران شدت اختیار کر چکاہے ۔ ایل پی جی کی قیمتوں میں اضافہ اور گیس کی عدم فراہمی کی وجہ سے ہر گھر میں پریشانی ہے ۔ ایل پی جی سرکاری ریٹ پر دستیاب نہیں اور بلیک میں مہنگی بک رہی ہے۔ سوئی گیس کی لوڈشیڈنگ اور گیس کا پریشر کم ہونے کی وجہ سے لوگوں کے لیے کھانا پکانا انتہائی مشکل ہوگیا ہے۔انہوںنے مزید کہاکہ پنجاب میں مجموعی اعتبار سے ٹریفک کا نظام انتہائی خراب ہوگیاہے ۔ شاہراہوں اور شہروں میں داخلہ کے وقت گھنٹوں ضائع ہورہے ہیں ۔ لاہور موٹروے راوی ٹول پلازہ پر کسی بھی گاڑی کو کراس کرنے میں تیس سے 45 منٹ معمول بن گیاہے ۔ انہوںنے کہاکہ ٹریفک نظام کی بہتری کے لیے وفاقی وزراء، صوبائی حکومتیں ، ایم این ایز اور موٹروے و ہائی وے پولیس عوام کو ریلیف دینے کے لیے بروقت اقدام کریں تاکہ اذیت و کوفت کا خاتمہ ہوسکے ۔

لیاقت بلوچ نے کہاکہ چیف جسٹس آف پاکستان کے ریمارکس کہ بھارت کو پانی چوری نہیں کرنے دیں گے بہت بروقت اور حوصلہ افزا ہیں لیکن بھارتی آبی جارحیت کے خلاف حکومت کو ہی مضبوط اور جرا ¿ت مندانہ اقدام کرناہوگا ۔ حکومت غفلت میں ہے اور خارجہ محاذ پر سرگرمیاں بے سمت اور بے ثمر ہیں ۔ 

اس موقع پر امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد، احمد سلمان بلوچ ، سید کلیم شاہ و دیگر بھی موجودتھے ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس