Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

دینی مدارس اسلام کے قلعے اورسالمیت پاکستان کی ضمانت ہیں، ان کے خلاف کسی بھی قسم کی مہم جوئی برادشت نہیں کی جائے گی


کراچی 22دسمبر 2018 جماعت اسلامی سندھ کے امیر وسابق ایم این اے محمد حسین محنتی نے کہا ہے کہ دینی مدارس اسلام کے قلعے اورسالمیت پاکستان کی ضمانت ہیں۔بیرونی قوتوں کی ایما پر تشکیل دی جانے والی پالیسی اور مدارس کے خلاف کسی بھی قسم کی مہم جوئی قوم برادشت نہیں کرے گی ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے سندھ کی معروف دینی درسگاہ جامعتہ العلوم الاسلامیہ منصورہ ہالا کے دورے پر طلباء،اساتذہ،اور منتظم کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کے دوران کیا ۔اس موقع پر مدرس جامعہ مولانا محمد احسن بھٹو،مرکزی شوریٰ کے رکن حافظ لطف اللہ بھٹو ضلعی امیر مولانا فقیر محمد لاکھوو دیگر ذمہ داران بھی موجود تھے۔ درین اثناءامیر صوبہ نے منصورہ مقام کے اجتماع ارکان سے خطاب اور جمعیت طلبہ عربیہ کے ضلعی دفتر کا دورہ اور ذمہ داران کے ساتھ نشست میں طلبہ کی سرگرمیوں سمیت تنظیمی رفتار کار کا جا ئزہ اور ہدایات دیں ۔ محمد حسین محنتی نے مزید کہا کہ پاکستان عالم کفر کیلئے خطرے کی گھنٹی بنا ہوا ہے، دینی مدارس نے ہمیشہ اسلام ونظریہ پاکستان کی حفاظت اور پاکیزہ معاشرہ کے قیام واسلامی اقدار کے فروغ کیلئے ناقابل فراموش کردار ادا کیا ہے۔ تحریک پاکستنا کی جدوجہد اور شہداءکی قربانیوں کا مقصد بھی یہی تھا کہ قیام پاکستان کے بعد یہاں اللہ کی دھرتی پر اللہ کا نظام نافذ ہوگا، مگر بدقسمتی سے قیام پاکستان سے لیکر ابتک جتنے بھی حکمران آئے انہوں نے قیام پاکستان کے مقاصد کو فراموش کرکے اپنے مفادات کی تکمیل اور نظریاتی سرحدوں کو کھوکھلا کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی، دینی مدارس کیخلاف مہم جوئی سے لیکر نظریہ پاکستان ،عقیدہ ختم نبوت، تحفظ ناموس رسالت ،سودی معیشت ،شراب پر پابندی کی قرارداد کی ناکامی اور نصاب تعلیم سے قرآن وحدیث وجہادی آیات کا خاتمہ اس کا واضح ثبوت ہے۔انہوں نے کہا کہ جامعہ منصورہ سمیت دینی مدارس سے فارغ ہونے والی طلبہ معاشرے میں اپنے اثرات کے ذریعے بدی کے خاتمے اور خیر کو فروغ دے رہے ہیں، حکومت ان کو تنگ کرنے کی بجائے سرپرستی کرے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس