Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

عوامی رکشہ یونین پاکستان کے کارکنوں کا ایل پی جی کی قیمتوں میں خود ساختہ اضافے کے خلاف احتجاجی دھرنا


لاہور  07دسمبر 18ء: عوامی رکشہ یونین پاکستان کے کارکنوں کا ایل پی جی کی قیمتوں میں خود ساختہ اضافے کے خلاف میڑو بس کے ٹریک پر دوگھنٹے تک احتجاجی دھرنا جارہی رہا سینکڑوں رکشوں کی وجہ سے کلمہ چوک مکمل طور پر بند ہوگیا۔چاروں طرف گاڑیوںکی لمبی لمبی لائنیں لگنے سے ٹریفک کا نظام درہم برہم ہوگیا۔دو گھنٹے کے بعد عوامی رکشہ یونین کے کارکنوں نے ضلعی انتظامیہ اور پولیس کے ساتھ کامیاب مذاکرات کے بعد میڑ وبس ٹریک اور ملحقہ سٹرکوں سے رکشہ ہٹا لئے اورٹریفک کی روانی بحال ہوگئی۔عوامی رکشہ یونین و عوامی پاسبان کے مرکزی چیئرمین مجید غوری نے دھرناکے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگرضلعی انتظامیہ کی جانب سے کل تک قیمتیں کنٹرول کرنے کیلئے گراں فروشوں کے خلاف کریک ڈائون شروع نہ کیا گیا تو ڈی سی او آفس کے سامنے دھرنا دیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ ایل پی جی مارکیٹنگ کمپنیاں، ڈسٹری بیوٹرز اور دکانداروں نے ناجائز منافع خوری کی مکمل چین بنا رکھی ہے۔یہ سب ضلعی انتظامیہ کی غفلت،نا اہلی اور پراسرار خاموشی کی وجہ سے بیماری کی طرح حملہ آور ہوتے ہیں۔ ایک طرف حکومت کی طرف سے لگائے جانے والے ٹیکسوں کی بھر مار سے مہنگائی کا طوفان برپا ہے دوسری جانب گراں فروش عوام کا خون چوس رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار عوامی رکشہ یونین کے چیئرمین مجید غوری نے گزشتہ روز کلمہ چوک میں ایل پی جی ڈسٹری بیوٹرز اور ایل پی جی کی مارکیٹنگ کمپنیوں جانب سے قیمتوں میں کئے جانے والے خودساختہ اضافے کے خلاف احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔مجید غوری نے کہاکہ اوگرہ کا مقرر کردہ ریٹ 113روپے ہے جبکہ دوکاندار170روپے میں فروخت کر رہے ہیں۔جب کہ ضلعی انتظامیہ خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے ۔تحریک انصاف کی حکومت سے غریبوں کو بہت امیدیں وابسطہ تھیں اور وزیر اعظم عمران خان کی نیک نیتی پر بھی کوئی شق نہیںلیکن ان کی پارٹی میں شامل ہونے والے شکست خوردہ اور لوٹ مار پارٹیوں کے وزراء عوام سے تحریک انصاف کو ووٹ دینے کا بدلہ لے رہے ہیں اور حکومت کو ناکام بنانے کے لئے ایڑھی چوٹی کا زور لگا رہے ہیں ۔ہمارا وزیر اعظم عمران خان سے مطالبہ ہے کہ مہنگائی اور گراںفروشی پر کنٹرول کرنے کیلئے اپنی صلاحیتوں کو بروئے کالائیں ۔ نا اہل وزیروں اور مشیروں سے اپنی جان چھڑائیں جن کی نا اہلی کی وجہ سے ملک اور عوام مشکلات سے دوچار ہیں۔ مجید غوری نے کہا کہ اگر مہنگائی اور گراں فروشی پر کنٹرول نہ کیا گیا تو احتجاج کا سلسلہ جاری رہے گا۔ احتجاج کے دوران عوامی رکشہ یونین کے کارکن ضلعی انتظامیہ اور ایل پی جی مافیا کے خلاف نعرے بازی کے دوران سینہ کوبی بھی کرتے رہے۔مجید غوری کے خطاب کے بعد حاجی رفاقت نے دعا کروائی جس کے بعد مظاہرین پر امن طور پر منتشر ہوگئے ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس