Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

جن کے قول و فعل میں تضاد ہو ،وہ اسلامی حکومت کے نعرے تو لگا سکتے ہیں مگر عملاً کچھ نہیں کر سکتے ۔راشدنسیم


 

لاہور11اکتوبر 2018ء:نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان راشد نسیم نے منصورہ میں مرکزی تربیت گاہ کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ اسلامی حکومت اور مدینہ کی ریاست صرف جماعت اسلامی قائم کرسکتی ہے، جن کے قول و فعل میں تضاد ہو ،وہ اسلامی حکومت کے نعرے تو لگا سکتے ہیں مگر عملاً کچھ نہیں کر سکتے ۔ اس وقت ملک بدترین معاشی غلامی کاشکار ہے ۔ عوام کو مشکلات سے نجات کے خواب دکھانے والوں نے ان کی زندگی مزید اجیرن کردی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ اسلامی حکومت قائم کرنے کے دعویداروں کو سب سے پہلے اپنے قو ل و فعل کا تضاد دور اور قوم سے کیے گئے وعدوں کو پورا کرنا ہوگا ۔ موجودہ حکومت کی پالیسیوں نے معیشت کو سنبھالا دینے کی بجائے اس کا بیڑا غرق کردیاہے ۔ مہنگائی اور غربت کے مارے عوام کسی مسیحا کی تلاش میں تھے مگر انہیں پھر انہی حالات کا سامناہے جن سے نجات کے لیے انہوںنے طویل انتظار کیا تھا ۔ انہوں نے کہاکہ اسلامی حکومت میں سربراہان حکومت کا معیار زندگی شاہانہ نہیں ، عام آدمی کے برابر ہوتاہے ۔ یہاں ایک بار حکومت میں آنے والوں کے اثاثوں کا کوئی حدو حساب نہیں ہوتا جبکہ غریب آدمی نان جویں کا محتاج ہو کر رہ گیاہے ۔راشد نسیم نے کہاکہ حکومت نے آئی ایم ایف سے قرضے کی اپیل کر کے قوم کی امیدوں پر پانی پھیر دیاہے ۔ حکومت ملکی معیشت کو مزید قرضوں کے شکنجے میں کسنے جارہی ہے ۔

 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس