Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

پورٹ قاسم اتھارٹی کے مزدوروں کی تنخواہیں فی الفور اد اکی جائیں۔حافظ نعیم الرحمن


کراچی ؍05اکتوبر2018ء:امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ پورٹ قاسم اتھارٹی کے مزدوروں کے مطالبات کی مکمل حمائت کرتے ہیں ،مزدوروں کو 9ماہ کی تنخواہیں فی الفور ادا کی جائیں،مزدوروں کی بلاجواز بے دخلی کا سلسلہ بند کیا جائے ، تنخواہوں کی عدم ادائیگی اور مزدوروں کی بے دخلی سے ہزاروں گھرانے متاثر ہورہے ہیں ، مزدوروں کے حق کے لیے ان کے ساتھ ہیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی پریس کلب پر ورکرز یونین آف پورٹ قاسم (سی بی اے )کے تحت دیے گئے دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر انہوں نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ وفاقی حکومت کی جانب سے گیس کی قیمتوں میں اضافہ عوام دشمن فیصلہ ہے اس سے عوام متاثر ہوں گے ، گیس کی قیمتوں میں اضافے کا اثر ٹرانسپورٹ کے کرایوں سمیت دیگر چیزوں پربھی پڑے گا ، حکومت گیس کی قیمتوں میں اضافہ واپس لے۔ دھرنے سے نیشنل لیبر فیڈریشن سندھ کے صدر نظام الدین شاہ ، این ایل ایف کراچی کے صدر عبد السلام ، ورکرز یونین آف پورٹ قاسم کے نائب صدر عبد الواحد اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔ دھرنے میں مزدور شرکاء نے ہاتھوں میں بینرز اور پلے کارڈ اٹھائے تھے جن میں درج تھا کہ پورٹ قاسم پر ڈاک لیبر بورڈ کاقیام عمل میں لایا جائے،ڈاک ورکرز کا معاشی قتل عام بند کیا جائے، ڈاک ورکرز کے تمام جائز مطالبات کو پورا کیا جائے ، ڈاک ورکرز کا استحصال بند کیا جائے ۔ دھرنے میں مزدوروں نے حکومت کے خلاف شدید غم و غصے کا اظہار کیااور نعرے بھی لگائے ، جن میں یہ نعرے شامل تھے ، نعرے مزدور جئے مزدور ، مزدور مزدور بھائی بھائی ، مزدور اتحاد زندہ آباد ۔قبل ازیں حافظ نعیم الرحمن نے وفاقی وزیر علی زیدی سے ٹیلی فون پر رابطہ کیا اور ان کو پورٹ قاسم اتھارٹی کے مزدوروں کے مسائل اور مطالبات سے آگاہ کیا اور اپیل کی کہ وہ ان مسائل کو حل کرائیں ۔ حافظ نعیم الرحمن نے دھرنے میں مزدور وں سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے کہا کہ جماعت اسلامی ہمیشہ سے مزدوروں کے ساتھ رہی ہے اور ان کے مسائل کے حل کے لیے جدوجہد بھی کی ہے ، ہم مزدوروں کو کبھی تنہا نہیں چھوڑیں گے ۔انہوں نے کہاکہ کراچی کے عوام چہروں کی تبدیلی نہیں نظام کی تبدیلی چاہتے ہیں ،ہر آنے والی حکومت خزانہ خالی ہونے کا کہہ کر مزدوروں کی تنخواہیں روک لیتی ہے جس کی ہم پُر زور مذمت کرتے ہیں ۔ نظام الدین شاہ نے کہاکہ تمام مزدور بھائیوں کو 11دن تک ثابت قدم رہنے پر مبارکباد پیش کرتا ہوں ، ہم حقوق کے حصول کے لیے کی جانے والی جدوجہد کو عبادت سمجھتے ہیں ، 1969میں معرضِ وجود میں آنے والی نیشنل لیبر فیڈریشن آج ایک بڑی فیڈریشن کی صورت میں موجود ہے اور اس پلیٹ فارم سے مزدوروں کے مسائل بھی بڑی تعداد میں حل کیے جاچکے ہیں ۔این ایل ایف آپ کی جدوجہد میں پہلے بھی ساتھ تھی اور آئندہ بھی ساتھ رہے گی ۔عبد السلام نے کہاکہ محنت کش مزدوروں نے 11دن دھرنا دے کر یہ ثابت کردیا ہے کہ کہ مزدور اپنے حق کے حصول کے لیے 11مہینے بھی بیٹھ سکتے ہیں ۔ این ایل ایف نے ہمیشہ پورٹ ڈاک کے مزدور ہوں یا اتھارٹی کے مزدور کی جدوجہد میں ان کا ساتھ دیا ہے اور اپنی خدمات پیش کیں ہیں ، این ایل ایف مزدوروں کی جدوجہد میں ہمیشہ شانہ بشانہ رہے گی ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس