Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اقامت دین ، عوامی خدمت اور کراچی کے حقوق کی جدوجہد جاری رکھیں گے ‘ حافظ نعیم الرحمن


کراچی ؍ 08 ستمبر2018ء: امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی اقامت دین کی جدوجہد ، عوامی خدمت اور کراچی کے حقوق کی آواز اٹھاتی رہی ہے اور یہ جدوجہد آئندہ بھی جاری رکھے گی ، اسلامی جمعیت طالبات کی خدمات قابل تحسین ہے ،منکرین ختم نبوتؐ اس ملک میں سیکولر ازم اور لبر ل ازم اور شیطانی نظام نافذکرنا چاہتے ہیں ،یہ ملک اسلام کیلئے بنا ہے اور اسلامی نظام نافذ ہو کر رہے گا ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ادارہ نورحق میں اسلامی جمعیت طالبات کراچی کی 3 روزہ تربیت گاہ کے دوسرے روز سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ حافظ نعیم الرحمن نے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ نبی کریمؐکی دعوت کی بنیاد عدل وانصاف کے حصول اور اسلامی قانون کے لئے ہے ، اس میں کوئی قانون سے بالاتر نہیں یہی اسلامی نظام کی بنیاد ہے ، دین صرف عبادات کیلئے نہیں بلکہ اس میں پورا نظام زندگی موجود ہے ، دین اسلام میں ہی انسان کیلئے دنیا و آخرت کی کامیابی ہے ، معاشرے میں ناانصافی اور ظلم و زیادتی سمیت تمام مسائل کا حل قرآن میں موجود ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کے بانی مولانا سید مودودی ؒ نے جماعت اسلامی کا قیام بڑی سوچ و فکر کے بعد کیا ، مولانا مودودیؒ اسلام کے مذہبی ، اخلاقی، معاشی ، معاشرتی اور سیاسی پہلوں اوردیگر مذاہب کے عقائد ،مقاصد اور عزائم سے بھی بخوبی واقف تھے اور انہوں نے اسلام کو بحیثیت دین نافذ کرنے کیلئے ہی جماعت اسلامی قائم کی اور اسلام کی بالادستی اور اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے اسے ایک نظام کے طور پر پیش کیا ، انہوں نے جماعت اسلامی کا قیام مسلک یا فرقہ کی بنیاد پر یا اقتدار حاصل کرنے کے لئے نہیں ، اللہ اور دین کیلئے کیا ، ہمیں اس پیغام کو عام کرنے کا کام جاری رکھنا ہے ۔ حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ مسلمانوں کو دین کا پیغام دینے اور اسے نافذ کرنے کے لئے مولانا مودودیؒ نے 71 افراد کے ساتھ مل کر جماعت اسلامی کی بنیاد رکھی اور آج ہم جس تحریک اور جماعت سے وابستہ ہیں، اس کی بنیاد لٹریچر اور علم ہے ، ایک اچھے داعی کے لئے بھی علم بہت ضروری ہے ، ہمیں خود کو حالات حاضرہ اور اپنے ارد گرد کے حالات اور ضروریات کے بارے میں پوری طرح سے باخبر رکھنے کی ضرورت ہے، بہترین منصوبہ بندی اور نظم جماعت کے تعاون اور اطاعت سے مشکل سے مشکل کام بھی آسانی سے ہوجاتے ہیں۔ ایک داعی کے لیے ہر محاذ پر علم اور تعلق باللہ مؤثر قوت اور ہتھیار ہیں، ہمیں دعوت کو وسیع کر کے اسلامی تحریک کو مضبوط کرنا ہے ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس