Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

نگران صوبائی حکومت امن وامان کے سلسلہ میں اپنی ذمہ داریاں پوری کرے۔میاں مقصوداحمد


لاہور11جولائی 2018ء: متحدہ مجلس عمل پنجاب کے صدر اور امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد نے پشاورخود کش حملے میں اے این پی کے امیدوارصوبائی اسمبلی ہارون بلور سمیت20افراد کے جاں بحق ہونے پراپنے شدیدردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ انتخابی مہم کے دوران دہشت گردی کاواقعہ آزادانہ وشفاف انتخابات کے راستے میں رکاوٹ اورصوبائی نگران حکومت کے کردار کے ساتھ ساتھ قانون نافذ کرنے والے اداروں کی صلاحیت کاپول کھول دینے کے لیے کافی ہے۔یہ واقعہ سیکیورٹی اداروں کی کمزوری اور ناقص منصوبہ بندی کامظہر ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔انتخابات کو سبوتاژ نہیں ہونے دیں گے۔انہوں نے کہاکہ ملک میں بلاخوف وخطر الیکشن کاانعقاد ناگزیر ہے۔دہشت گردی کی فضامیں شفاف اور منصفانہ انتخابات ممکن نہیں ہوسکتے۔ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت ملکی حالات کو خراب کرنے کی کوشش کی جارہی ہے جوکہ تشویش ناک امر ہے۔دہشت گردی ایک ناسور بن چکی ہے جس نے نائن الیون سے لے کر اب تک 70ہزار بے گناہ پاکستانیوں کی جان لے لی ہے اورملکی معیشت کو125ارب ڈالر کانقصان برداشت کرنا پڑرہاہے۔ضرورت اس امر کی ہے کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے حالیہ خود کش حملے میں ملوث اصل افراداورپس منظر میں سازشی ذہن کوبے نقاب کریں۔انہوں نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل کامیاب ہوکر ایسی پالیسیاں بنائے گی جن سے پاکستان کے22کروڑ عوام کو تحفظ ملے گا۔مسلم لیگ(ن)اور پیپلزپارٹی کی حکومتوں نے دہشت گردی کے مکمل خاتمے کے لیے کچھ نہیں کیا۔انہوں نے بھی جنرل پرویزمشرف کی بزدلانہ پالیسیوں کاہی تسلسل جاری رکھا۔ماضی کے حکمرانوں نے ملک وقوم کو شدید مایوس کیا ہے۔انہوں نے کہاکہ ملک بھر میں 25جولائی کو عام انتخابات ہورہے ہیں۔تمام سیاسی جماعتیں اور امیدوارمیدان میں موجود ہیں ان کی سیکیورٹی کویقینی بناناہوگا۔ملک وقوم کسی بھی قسم کے عدم استحکام کامتحمل نہیں ہوسکتے۔کچھ قوتیں ملک میں جمہوریت کاراستہ روکنا چاہتی ہیں مگر وہ کل بھی ناکام ہوئی تھیں اور انشاء اللہ آج بھی ناکام ہوں گی۔ 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس