Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

دولت کے ذریعہ عوام پر مسلط حکمران سیاسی و معاشی دہشت گردہیں ۔دردانہ صدیقی


لاہور:10 /اپریل ( ) جماعت اسلامی پاکستان (حلقہ خواتین ) کی جنرل سیکریٹری دردانہ صدیقی نے کہا ہے کہ دولت کی بنیاد پر عوام کی گردنوں پر سوار حکمران سیاسی اور معاشی دہشت گرد ہیں جنہوں نے ملک و قوم کو یرغمال بنارکھاہے۔ دو فیصد اشرافیہ 98 فیصد عوام پر حکمرانی کررہی ہے۔ ایساپاکستان چاہتے ہیں جس کا دنیا میں عزت و وقار کے ساتھ نام ہو اور کسی کے سامنے ہمیں ہاتھ نہ پھیلانا پڑے ۔ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی حلقہ خواتین کے تحت صوبہ جات کی ذمہ داران کے جائزہ اجلاس برائے انتخابی نشست میں خطاب کر تے ہوئے کیا۔ نشست میں نائب قیمات اور مرکزی الیکشن سیل کی نگران عائشہ منور و دیگرذمہ داران بھی شریک ہوئیں ۔دردانہ صدیقی نے مزید کہا کہ الیکشن میں اربوں روپے خرچ کرنے والے الیکشن اور عوام کی مجبوریوں کو خریدتے ہیں اور پھر ایوانوں میں جا کر قومی دولت لوٹتے ہیں ان کے لیے الیکشن ایک کاروبار اور سیاست ایک تجارت ہے جس میں اربوں لگا کر کھربوں کماتے ہیں۔ نظام کی باگ دوڑ عوام کے مسائل کو سمجھنے اور امت کا درد رکھنے والوں کے ہاتھوں میں دینے کی ضرورت ہے۔ موجودہ وقت کی ضرورت ہے کے انتخابات میں ایمان دار اور کرپشن سے پاک قیادت سامنے آئے۔ ایم ایم اے کی بحالی انشاء اللہ مثبت تبدیلی کا ذریعہ بنے گی۔ نظریہ پاکستان کے تحفظ، دینی و اخلاقی اساس کے تحفظ اور خوشحال، اسلامی اور فلاحی پاکستان کی تعمیر کیلئے دینی جماعتوں کا اتحاد باعث برکت ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ وقت اور حالات کے چیلنجز کے مقابلے کے لئے اجتماعی جدو جہد کے ساتھ آگے بڑھنا ضروری ہے۔ ظلم کے نظام سے عوام کو نکالنے کے لئے ہم میدان میں کھڑے ہیں۔ انتہائی نامساعد حالات میں بھی امید کے چراغ روشن رکھنے والا وژن اور یقین اسوہ نبوی صلی اللہ علیہ وسلم سے حاصل کر نے کی ضرورت ہے ۔ مایوسی شیطان کا وار ہے۔ اللہ پر یقین رکھنے والے، اللہ کی بندگی کے راستے میں کبھی مایوس نہیں ہوتے۔ یکسوئی حضرت ابراہیم علیہ السلام کی سنت ہے اوراس سنت کی ہمیں عمل پیرا ہونے کی ضرورت ہے۔ ایم ایم اے اقتدار میں آ کر ملک میں قرآن و سنت کا نظام نافذ کرے گی۔ ہم سمجھتے ہیں کہ ملک و قوم کے تمام مسائل کا حل شریعت کے نفاذ میں ہے۔اس موقع پر متعین نشستوں کی صورت حال کا جائزہ اور کاموں کی بہتری ک لیے مشاورت بھی کی گئی

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں



سوشل میڈیا لنکس