Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

آئندہ بجٹ میں مجموعی ملکی پیداوارکا پانچ فیصد حصہ تعلیم کے لئے مختص کیا جائے۔ محمد عامر


لاہور3 / اپریل 2018ء:اسلامی جمعیت طلبہ پاکستان کے ناظم اعلیٰ محمد عامر نے کہا ہے کہ تعلیم کے لئے جی ڈی پی کا کم ازکم پانچ فیصدحصہ مختص کیا جائے حکمران جماعت نے اپنے انتخابی منشور میں تعلیم کو ترجیح اول میں رکھا مگر تاحال تعلیم کے بارے میں مئوثر اقدامات نہیں کئے گئے۔تعلیم کو ہر دور میں سیاست اور سفارشی کلچر کی بھینٹ چڑھایا گیا ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے مرکزی سیکرٹریٹ میں جمعیت کے زیر اہتمام چلنے والی مہم ’’تعلیم کو پانچ دو’’کے جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمعیت طلبہ کی مہم زور شور سے جاری ہے، جمعیت کے زیر اہتمام پری بجٹ سیمنارز بھی صوبائی سطح پر ہو رہے ہیں۔جب کہ صحافیوں، سیاست دانوں، اساتذہ اور سول سوسائٹی کے نمائندوں سے بھی ملاقاتیں کر کے انہیں اس مہم کا حصہ بنایا جا رہا ہے، محمد عامر کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میںاڑھائی کروڑ بچے سکول نہیں جاتے، پاکستان دنیا کے ان چند ممالک میں شامل ہے جہاں خواندگی کا تناسب تشویشناک حد تک کم ہے۔بد قسمتی سے پاکستان دنیا کے ان چند ممالک میں شامل ہے جہاں خواندگی کا تناسب تشویشناک حد تک کم ہے اور لازمی پرائمری تعلیم بدستور خواب بنی ہوئی ہے۔جب تک تعلیم پر خرچ نہیں کیا جائے گا تب تک شرح خواندگی بہتر کرنے کا خواب شرمندہ تعبیر نہیں ہو سکے گا، انہوں نے طلبہ سے اپیل کی ہے کہ وہ جمعیت کی مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں تاکہ حکومت کو تعلیمی بجٹ میں اضافے پر مجبور کیا جا سکے۔انہوں نے مزید کہا کہ تعلیمی شعبے کو وسائل فراہم کرکے پاکستان کی تعمیر و ترقی کی راہ پر گامزن کیا جاسکتا ہے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس