Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

ہم تہذیبوں کا ستون بنیں گی، خاندان کو استحکام بخشیں گی اورامت کو متحد کریں گی۔ انٹرنیشنل مسلم وویمن یونین کانفرنس


لاہور 13مارچ 2018ء:انٹرنیشنل مسلم وویمن یونین کے زیر اہتمام عالمی کانفرنس ”عورت تہذیبوں کا ستون“ کے تیسرے روز کونسل آف ٹرسٹیز کا اجلاس منعقد کیا گیا جس کے تین سیشن تھے ۔ پہلے سیشن کی صدارت سوڈان کی ڈاکٹر عفاف احمد محمد حسین نے کی اور کونسل آف ٹرسٹیز پریذیڈنٹ کی رپورٹ پیش کی ۔ دوسرے سیشن کی صدارت ڈاکٹر کوثر فردوس (پاکستان) نے کی اور تمام ریجن کی رپورٹ پیش کی گئی جبکہ تیسرا اور آخری سیشن ڈاکٹر سمیحہ راحیل قاضی کی زیر صدارت منعقد ہوا جس میں ہر ملک کیلئے 2018کا ایکشن پلان پیش کیا گیا ۔ تین روز تک جاری رہنے والی اس عالمی کانفرنس میں پاکستان کے علاوہ یوگنڈا ، ترکی ، سری لنکا ، اردن ، لبنان ، سوڈان ، انڈونیشیا اور دیگر ممالک سے انٹرنیشنل مسلم وویمن یونین کے عہدیداران نے شرکت کی ۔ وقابی اکبر (یوگنڈا) ، رابعہ یلماز (ترکی) ، سعدی کاسمیاق (ترکی) ، زین العابدین محامناوار (سری لنکا) ، ڈاکٹر نصیحہ امین (سری لنکا) ، ھیام ابو العدس (اردن) ، ڈاکٹر عائشہ یکن (لبنان) ، ہالہ محغوب (سوڈان) ، حداد بلال (لبنان) ، ڈاکٹر عفاف احمد محمد حسین (سوڈان) ، ڈاکٹر نادیہ ، سیتی ہانا حرن عبیداللہ (انڈونیشیا) ، سیتی نرسانیتا (انڈونیشیا) اما لبیس (انڈونیشیا) ، دردانہ صدیقی ، ڈاکٹر کلثوم رانجھا ، ثمینہ سعید ، ساجدہ احسان اور دیگر خواتین نے خطاب کیا ۔ کانفرنس کے بنیادی لائحہ عمل میں مستقبل کا منصوبہ اور اس کا منظرنامہ کچھ اس طرح ہے ۔: کہ ہم ”پیغام پاکستان“ کو پوری دنیا تک پھیلایا جائے گا ۔ اسلامی جمہوریہ پاکستان ایک پرامن ملک ہے اور وہ تمام دنیا کے مسلمانوں کی امیدوں کا مرکز ہے ، یہاں ہم بین المذاہب اور بین المسالک رابطے کا پروگرام رکھتے ہیں ۔ ہم عورتیں تہذیبوں کا ستون بنیں گی ۔ خاندان کے ادارے کو استحکام بخشیں گی اور اپنے اپنے ممالک سے فرقہ ورانہ تشدد اور ہر قسم کی انتہا پسندی اور دہشتگردی کے خلاف اپنی تمام حکومتوں اور اقوام کو متحد کریں گی ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس