Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

آئین کے مطابق اب انتخابات میں کوئی رکاوٹ نہیں ۔ آئین سے بالاتر کوئی بھی اقدام خوفناک نتائج لائے گا ۔لیاقت بلوچ


لاہور4  مارچ2018ء:جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل اور سیاسی امور کمیٹی کے صدر لیاقت بلوچ نے اپنے ایک بیان میں کہاہے کہ سینیٹ آف پاکستان کا تین سال بعد 52 نشستوں کے لیے انتخابی عمل مکمل ہو گیاہے۔ ہر پارٹی کو اپنے حصے کے مطابق سینیٹ نشستیں مل گئی ہیں ۔ کراچی میں ایم کیو ایم نے اپنا بیڑہ خود غرق کیا ہے۔ چند نشستوں پر غیر معمولی کیفیت ہے، الیکشن کمیشن تحقیق کرے اور کھوج لگائے ۔ بہر حال سیاسی جمہوری قیادت نے بحرانی و بے یقینی کے ماحول میں سیاسی تدبر اور بالغ نظری کا ثبوت دیاہے جس سے جمہوری عمل جاری رہنے کے امکانات روشن ہوئے ہیں ۔ 

لیاقت بلوچ نے کہاکہ 2018 ءکے عام انتخابات آئین اور جمہوری تقاضوں کے مطابق ناگزیر ہیں ۔ آئین کے مطابق اب انتخابات میں کوئی رکاوٹ نہیں ۔ آئین سے بالاتر کوئی بھی اقدام خوفناک نتائج لائے گا ۔ سیاسی بیانیے مزید تباہی لائیں گے ۔ قومی سلامتی کا تقاضا ہے کہ حالات کو معمول کے مطابق انتخاب اور احتساب کی طرف بڑھایا جائے۔ 

لیاقت بلو چ نے کہاہے کہ خیبر پختونخوا میں تحریک انصاف دو نشستیں ہار گئی ،یہ انتخابی عمل میں بے تدبیری ، غیر ضروری اعتماد کی وجہ سے ہوا جبکہ پنجاب میں چوہدری سرور نے تجربہ ، رابطہ اور بہتر تدبیر سے سینیٹ سیٹ جیت لی ۔ خیبر پختونخوا میں جماعت اسلامی کے مشتاق احمد خان کی کامیابی بڑی کامیابی ہے ۔ 

لیاقت بلوچ نے کہاکہ متحدہ مجلس عمل کی مرکزی کونسل کا اجلاس 12 مارچ کو اسلام آباد میں جمعیت علمائے اسلام کی میزبانی میں ہوگا ۔ مرکزی کونسل مرکزی تنظیم سازی ، بیانیہ اور آئندہ کے لائحہ عمل کی منظوری دے گی ۔ اجلاس میں ممبر جماعت کے سربراہ کے ساتھ تین نمائندے شرکت کریں گے ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس