Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

احتساب کے عمل کو تیز ،بے لاگ اور بلا تفریق کیا جائے ۔ ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی


کراچی26 فروری 2018 جماعت اسلامی سندھ کے امیر ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی نے اسٹیٹ بنک آف پاکستان کی جانب سے غیر ملکی قرضے 89ارب ڈالر کی بلند ترین سطح پر پنہچ جانے کی رپورٹ کو صنعتی ترقی و معاشی خوشحالی کے دعویدار حکمرانوں کےلئے لمحہ فکریہ قرار دیا ہے۔ انہوں نے آج ایک بیان میں کہا کہ ایک طرف حکمراں ٹولہ اور ان کے حواری ملک میں بڑی ترقی و خوشحالی کرتے تھکتے نہیں ہیں تو دوسری جانب عام آدمی آج بھی دو وقت کی روٹی اور پینے کے صاف پانی کی نعمت سے بھی محروم ہے۔ عام آدمی کے دکھوں و مشکلات میں دن بدن اضافہ ہوتا جارہا ہے جبکہ حکمرانوں کے محلات، کاروبار و کارخانوں اور اآف شور کمپنیوں میں ضرور اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ کرپشن و دہشت گردی کے شیطانی کھیل کا خاتمہ قوم کی پہلے دن سے اولین ترجیح ہے۔ احتساب کے عمل کو تیز بے لاگ اور بلا تفریق کیا جائے خاص طور پر قومی دولت کی لوٹ مار کر کے بیرونی ممالک میں جمع شدہ رقم کو ہی صرف واپس لایا جائے تو ملک قرضوں سے نجات اور قوم خوشحال ہو جائے مگر کرپشن کلب کے لوگ اپنے مفادات کےلئے متحد ہیں پنجاب میں بیورو کریسی کے احتجاج سے لیکر سندھ سیکریٹریٹ میں آتشزدگی کے واقعات کرپشن چھپانے اور نشانات مٹانے کی کوشش ہے۔ عدالت پانامہ لیکس میں شامل دیگر چوروں کو بھی قانون کی پکڑ میں لانے کےلئے اقدامات کرے تاکہ ایک فرد یا خاندان کے احتساب کا تاثر ختم ہو۔صوبائی امیر نے کہا کہ پوری قوم عدلیہ کے ساتھ کھڑی ہے کیونکہ کرپشن اور کرپٹ قیادت سے نجات بغیر ملک کی تقدیر نہیں بدل سکتی

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس