Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

دینی مدارس کے خلاف منفی پروپگنڈے اور بے بنیاد الزمات کا سلسلہ ختم کیا جائے۔قرارداد


لاہور 20 فروری 2018ء:جمعیت طلبہ عربیہ پاکستان کے زیر اہتمام دوسری عمومی شوریٰ کا اجلاس سید ابو الاعلیٰ لائبریری میں منعقد ہو ا جس میں جمعیت طلبہ عربیہ کے مرکزی شوریٰ کے اراکین میں قرارداد پاس کی جس میں حکومت پاکستان کو مطالبات کے بارے آگاہ کیا گیا،جمعیت طلبہ عربیہ پاکستان یہ مطالبہ کرتی ہے کہ دستور پاکستان کے تقاضے کے مطابق دستور کی اسلامی دفعات پر فوری عمل درآمد کیا جائے۔دینی مدارس کی حریت و آزادی کو ہر قیمت پر برقرار رکھا جائے۔پانچوں وفاقوں کو باقاعدہ ایکٹ آف پارلیمنٹ کے ذریعے خودمختار امتحانی اور تعلیمی بورڈ کی قانونی حیثیت دی جائے۔دینی مدارس کے خلاف منفی پروپگنڈے اور بے بنیاد الزمات کا سلسلہ ختم کیا جائے۔دینی مدارس کے ہونہار طلبہ کی سرپرستی کرتے ہوئے ان کے لیے اسکالرشپ اور کوٹہ کی منظوری دی جائے۔نظام تعلیم کو اسلامی اصولوں پر استوار کیا جائے دوہرا نظام تعلیم اور مخلوط نظام تعلیم کو ختم کیا جائے۔مدراس کی رجسڑیشن اور بینک اکاونٹ کھولنے کے عمل کو آسان بنایا جائے۔ہم حکومت آزاد کشمیر کے قانون ختم نبوت کے نفاذ کی تحسین کرتے ہیں اور اس کے توسط سے حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ختم نبوت کے قانون کو اپنی اصل حیثیت پر برقرار رکھا جائے۔اسلامی جمہوریہ پاکستان میں بڑھتی ہوئی فحاشی و عریانی کی روک تھام کی جائے،اور میڈیا کو اسلامی اصولوںکے مطابق کوڈ آف کنڈکٹ دیا جائے۔متحدہ مجلس عمل کی بحالی کو خوش آئندقرار دیتے ہوئے ہم ان کو مکمل تعاون کی یقین دہانی کرواتے ہیں۔حکومت پاکستان اپنی خارجہ پالیسی میں مسئلہ کشمیر کو سر فہرست رکھے اور بھارت کے ساتھ تمام معاہدات و تعلقات کو مسئلہ کشمیر کے حل کے ساتھ مشروط رکھے۔امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ کے امریکی قونصل خانے کو القدس منتقل کرنے کے فیصلے کی بھرپور مذمت کرتے ہوئے حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ تمام مسلم ممالک کے مشترکہ موقف کے لیے قائدانہ کردار ادا کرے۔برما میں انسانیت سوز مظالم پر انسانی حقوق کی تنظیموں اور حکومت پاکستان کی مجرمانہ خاموشی کی مذمت کرتے ہیں۔پاکستان کی بیٹی ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی کے لیے حکومت پاکستان سے بھرپور کرادر ادا کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں۔ہم بنگلادیش میں جماعت اسلامی کے قائدین کو حب الوطنی کی بنا ءپر دی جانے والی پھانسیوں کی مذمت کرتے ہیں اور حکومت پاکستان سے اپیل کرتے ہیں کہ ان دفاداران پاکستان کی سزاوں کی روک تھام کے لیے کوئی فوری اقدام کرئے۔ہم مغربی استعمار کے امت مسلمہ کو شیعہ سنی کی بنیاد پر تقسیم کروانے اور لروانے کی بھرپور مذمت کرتے ہیں۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس