Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

سینیٹ انتخابات کے لیے ممبران اسمبلی کی اس طرح منڈی لگ گئی ہے جیسے ہر شہر میں مویشی منڈی لگتی ہے ۔راشدنسیم


لاہور11فروری2018ء:نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان راشد نسیم نے کہاہے کہ مختلف سیاسی جماعتیں بڑے بڑے سرمایہ داروں کو سینیٹ کے ٹکٹ دے رہی ہیں جن پارٹیوں کی صوبوں میں ایک بھی نشست نہیں، انہوں نے بھی سینیٹ کے لیے امیدوار کھڑے کر دیے ہیں ۔ کرپشن کے حمام میں قریباً سبھی ننگے ہیں مگر تین بڑی پارٹیوں نے تو ثابت کردیاہے کہ ان میں کوئی فرق نہیں ۔ انتخابی میدان میں ان سب کا طریقہ واردات ایک ہی ہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے منصورہ میں جاری مرکزی تربیت گاہ کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ تربیت گاہ سے نائب امیر جماعت اسلامی ڈاکٹر فرید ا حمد پراچہ نے بھی خطاب کیا ۔

راشد نسیم نے کہاکہ سینیٹ انتخابات کے لیے ممبران اسمبلی کی اس طرح منڈی لگ گئی ہے جیسے ہر شہر میں مویشی منڈی لگتی ہے ۔ سپریم کورٹ اور الیکشن کمیشن کو اس حوالے سے انتہائی مثبت کردارا د ا کرنا ہے اور ایسے تمام امیدواروں کے کاغذات ضبط کر لینے چاہئیں جو صرف دولت کی بنیاد پر ووٹ خریدنا چاہتے ہیں اور ان کا مطمع نظر سیاست نہیں بلکہ کرپشن ہے اور وہ ایوان بالا کے اس لیے ممبر بننا چاہتے ہیں کہ انہیں کرپشن کا پورا موقع مل سکے اور کوئی ان کا ہاتھ روکنے والا نہ ہو ۔ انہوںنے کہاکہ جب اس طرح کے لوگ ایوانوں پر قابض ہو جائیں گے تو ملک شدید خطرات میں گھر جائے گا ۔ انہوںنے کہاکہ تقریباً تمام پارٹیوں میں موروثیت ہے اور پارٹی سربراہ پارٹیوں پر اپنی اولادکا حق سمجھتے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ جن پارٹیوں کے اپنے اندر جمہوریت نہیں ہے ، وہ کس منہ سے جمہوریت کا راگ الاپ رہی ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ انتخابات کے موقع پر نو دولتیے اور کرپشن سے دولت اکٹھی کرنے والے اس طرح باہر نکلتے ہیں جیسے برسات کے موسم میں ہر طرف سے مینڈکوں کے ٹرانے کی آوازیں آنا شروع ہو جاتی ہیں اور وہ لوگ بھی الیکشن لڑنے کے لیے تیار ہو جاتے ہیں جو پہلے کرپشن یا دیگر وجوہات پر نااہل ہوئے اور ایوانوں سے نکالے گئے تھے ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس