Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

دبئی میں پاکستانیوں کی 800ارب کی جائیدادوں کا ریفرنس نیب کو بھجوانا خوش آئند ہے۔میاں مقصوداحمد


لاہور11فروری2018ء:امیرجماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمدنے قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کی جانب سے دبئی میں پاکستانیوں کی 800ارب کی جائیدادوں کا ریفرنس نیب کو بھجوانے کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ قومی دولت لوٹنے اور ٹیکس چوری کرنے والوں کا کڑااحتساب کیاجائے۔ پاکستان میں کرپشن کے ناسور کوختم کرناوقت کا ناگزیر تقاضا ہے۔کرپشن اور جمہوریت ساتھ ساتھ نہیں چل سکتیں۔جب تک کرپشن پر قابو نہیں پایاجاتااس وقت تک ملک میں حقیقی جمہوریت بحال نہیں ہو گی۔انہوں نے کہاکہ الیکشن کے عمل کو اتنا مہنگاکردیا گیا ہے کہ کوئی غریب اور متوسط طبقے کا آدمی الیکشن لڑنے کا سوچ بھی نہیں سکتا۔جن لوگوں نے ناجائز طریقے سے مال ودولت کمایاہے ان کی اکثریت بار بار اسمبلیوں میں پہنچ جاتی ہے۔ شریف فیملی کے افراد نے اگر ٹیکس چوری کرکے بیرون ملک دولت منتقل نہیں کی ہے تو انہیں پھر اس قدر بوکھلاہٹ کا شکار نہیں ہونا چاہئے۔انہوں نے کہاکہ ایک طرف حکومت عوام پر نئے ٹیکس لگاکر ان کاخون نچوڑرہی ہے اور دوسری جانب حکمران خاندان خود غیر قانونی طور پر ٹیکس چوری میں ملوث ہے۔ ملک میں روزانہ 12ارب روپے کی کرپشن حکمرانوں کی کارکردگی پر سب سے بڑاسوالیہ نشان ہے۔گڈگورننس کے دعوے ریت کی دیوار ثابت ہوئے ہیں۔رہی سہی کسر قرضوں نے پوری کردی ہے۔بجٹ کا ایک بہت بڑا حصہ قرضوں پر لگنے والے سود کی ادائیگی میں خرچ ہوجاتا ہے جبکہ عوام کو اس حوالے سے کسی قسم کاکوئی ریلیف میسر نہیں۔انہوں نے کہاکہ ملک میں بلاتفریق سب کا احتساب ہونا چاہئے۔قومی خزانے کو نقصان پہنچانے والے رعایت کے مستحق نہیں۔ کرپٹ عناصر خواہ کسی کی بھی صفوں میں ہیں ان کے خلاف پوری قوت سے کاروائی عمل میں لائی جائے۔میاں مقصود احمد نے مزیدکہاکہ جب تک کرپشن کا قلع قمع اور کرپٹ عناصر کوپابندسلاسل نہیں کردیاجاتاملک ترقی وخوشحالی کی راہ پر گامزن نہیں ہوسکتا۔ کرپشن ناسور بن گئی ہے اورملکی ڈھانچے کو دیمک کی طرح کھارہی ہے۔بدعنوانی کے انسدادکے لئے نیب کومزید متحرک اور فعال ہونا ہوگا۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس