Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

نظام تعلیم کو نظریہ پاکستان کا ہم آہنگ کرنا ملکی استحکام اور بقاءکی ضمانت ہے ۔ذکر اللہ مجاہد


لاہور 6فروری 2018ء: امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ نظام تعلیم کو نظریہ پاکستان کا ہم آہنگ کرناملکی استحکام اور بقاءکی ضمانت ہے۔موجودہ نصاب تعلیم ایک قوم کی بجائے مختلف طبقات پیدا کر رہاہے ۔یکساں نظام تعلیم میںہی قومی وحدت اور ملکی ترقی کا راز پنہاں ہے۔ حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ نصاب تعلیم کے معاملات کو صوبوں کے حوالے کرنے کی بجائے مرکزی سطح پر منظم کرے ۔ ان خیالات کا اظہار گذشتہ روز انہوں نے تانیس گروپ آف انسٹی ٹیوٹ کی سالانہ تقریب تقسیم انعامات میں طلبہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر جماعت اسلامی شعبہ سیاسی امور کے ڈپٹی سیکرٹری و داراارقم سکول کے ڈائریکٹر محمد الیاس ، جماعت اسلامی پی پی 139کے امیر حسان بن سلمان ، فاروق ارشد ، شاہد امین انصاری ، جبرل سیکرٹری پرائیویٹ سکولز ایوسی ایشن امتیاز و دیگر رہنماءموجود تھے۔ ۔انہوں نے مزید کہا کہ آج ہم خود کو مسلمان کہلانے میں فخر تو کرتے ہیں ، مگر عملی زندگی میں اسلام کے اصولوں اور قرآن وسنت کی ہدایات کو نظر انداز کرتے ہیں۔ انفرادی زندگی میں فرسودہ رسم و رواج کو ہی اہمیت دیتے ہیں اور اجتماعی طور پر حلال و حرام ، سچ اور جھوٹ کی کوئی تمیز نہیں رکھتے ۔ انہوں نے کہا کہ جب تک دوہرہ نظام تعلیم اور طرز عمل رہے گا تو معاشرے میں خرابیاں پیدا ہو ں گی ۔ بہترین معاشرہ بنانے کیلئے ہمیں انفرادی اور اجتماعی زندگی میں اسلامی اصولوں کو اپنانا ہوگا۔ ذکر اللہ مجاہد نے کہا کہ نوجوان کسی بھی قوم کا سرمایہ ہوتے ہیں اس لیے انھیں عوام کی خدمت کو اپنا اوڑھنا بچھونا بنا نا ہو گا اوراساتذہ طلبہ کے ذہنوں میں اسوہ رسولﷺ کو اجاگر کریں تاکہ ملک کا مستقبل نوجوان دنیاوی تعلیم کے ساتھ ساتھ کو اسلامی روایات سے بھی آشناس ہوں ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس