Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

مقبوضہ کشمیر میں آزادی اور حق خودارادیت کی تحریک پاکستان کی تکمیل اور بقاء کی تحریک ہے ۔لیاقت بلوچ


لاہور5فروری2018ء: سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ 5فروری یوم یکجہتی کشمیر کا آغاز 1990ء میں سابق امیر جماعت اسلامی پاکستان قاضی حسین احمد (مرحوم) کی اپیل پر ہوا تھا ۔ جماعت سلامی کشمیر کے مسلمانوں کی ہمیشہ پشتی بان رہی ہے ، ہم قاضی حسین احمد کے اس مشن کو آگے بڑھاتے رہے ہیں مقبوضہ کشمیر میں آزادی اور حق خودارادیت کی تحریک کا مقصد پاکستان کی تکمیل اور بقاء کی تحریک ہے ۔ ہمارے کشمیری بھائی اس تحریک کے دوران اب تک ایک لاکھ سے زائد شہدا ء کے مقدس لہو کا نذرانہ پیش کر چکے ہیں جن میں مرد ، عورتیں ،بچے اور بوڑھے شامل ہیں ۔ان خیالات کا اظہار گذشتہ روز انہوں نے مال روڈ لاہور پر جماعت اسلامی لاہور کے زیر اہتمام یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے کشمیر مارچ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ کشمیر مارچ میں تمام مکاتب فکر کے افراد ، مزدور ، طلبہ ، کسان ، ڈاکٹرز ، انجینئرز اور وکلاء سمیت مردوخواتین اور بچوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔ کشمیر مارچ کی قیادت سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ ، امیر جماعت اسلامی ذکر اللہ مجاہد ، مرکزی صدر جمعیت اہلحدیث ابتسام الٰہی ظہیر ، مرکزی نائب صدر اسلامی تحریک پاکستان حافظ کاظم رضا نقوی ، مرکزی رہنماء جمعیت علماء پاکستان قاری زوار بہادر، مرکزی سیکرٹری اطلاعات جماعت اسلامی پاکستان امیرالعظیم ، جماعت اسلامی کے پنجاب اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر ڈاکٹر سید وسیم اختر ، سیکرٹری جنرل کسان بورڈ ارسلان خان خاکوانی ، سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی لاہور انجینئر اخلاق احمد، نائب امراء جماعت اسلامی لاہور ملک شاہد اسلم ، ضیا ء الدین انصاری ، انجینئر خالد عثمان ،جے آئی یوتھ لاہو رکے صدر شاہد نوید ملک ، صدر الخدمت فائونڈیشن لاہور عبدالعزیز عابد ، سیکرٹری اطلاعات جماعت اسلامی لاہور اے ڈی کاشف ، سیکرٹری سیاسی کمیٹی لاہور چوہدری محمودالاد ، چوہدری منظور حسین گجر ، وقار ندیم وڑائچ ، لاہور کے سیاسی زعماء ذولفقار بھٹی ، عابد میر بٹ احسن شاہد ، احسان چوہدری ،عبدالقیوم چوہدری و دیگر مذہبی اور سیاسی قائدین کی ۔ کشمیر مارچ میں حلقہ خواتین جماعت اسلامی لاہور کی رہنما بیگم قاضی حسین احمد، سابق ایم این اے ڈاکٹر سمعیہ راحیل قاضی ، عافیہ سرور ، ربیعہ طارق ، زرافشاں فرحین و دیگر خواتین قائدین نے شرکت کی ۔لیاقت بلوچ نے مزید کہا کہ 1947میں بھارت نے انگریزوں سے مل کر کشمیریوں کے خلاف سازش کی ۔ بھارت افغانستان کے ذریعے پاکستان میں دہشت گردی کر رہا ہے جس کی جماعت اسلامی سمیت پوری پاکستانی قوم مذمت کرتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے کشمیری قوم کی رائے معلوم کرنے کے لیے نمائندہ مقرر کرے ۔ بھارت 70سال سے کشمیریوں پر ظلم و ستم کی انتہاء کر رہا ہے ۔ بھارت طاقت اور غرور کے نشے میں اس خطے کو ایٹمی جنگ کی طرف لے جا رہا ہے اور اس کا یہ غرور اور تکبر اسے لے ڈوبے گا۔ اس موقع پر امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی قیادت حقائق کو سمجھے اور کشمیر یوں کو آزادی کا حق دے ۔ موجودہ حکمران کشمیر کی آزادی کیلئے جدوجہد کرنے کی بجائے پوری قوم کے جذبات کے برعکس بھارتی سرکار کے ساتھ دوستی کر کے کشمیریوں کے خون کے ساتھ غدار ی کر ر ہے ہیں۔ مغرب میں کتوں اور بلیوں کے مرنے پر بھی واویلا شروع ہو جاتا ہے جبکہ کشمیر میں تو زندہ انسانوں کو گاجر مولی کی طرح کاٹا جا رہا ہے یہاں انسانی حقوق کی تنظیمیں اور عالمی برداری خاموش کیوں ہے ؟۔انہوں نے کہا کہ اب تک تحریک آزادی کشمیر میںلاکھوں کی تعداد میں زخمی اور اپاہیج ہو چکے ہیں ۔ ہر گھر سے جنازے نکل رہے ہیں ۔ عورتوں کی عصمتوں کے درد ناک واقعات وادی کشمیر میں معمول بن چکے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ بھارتی دہشتگردی اور ظلم و بربریت کے نتیجے میں پورا کشمیر آگ و خون کی لپیٹ میں ہے اور جنت نظیر وادی اور اس کے حسن کو تباہ و برباد کیا جا رہاہے ۔ کشمیر میں ہونے والے مظالم کی دنیا میں کوئی مثال نہیں ملتی ۔ جمہوریت اور امن کا دعویدار بھارت کا مکروہ چہرہ پوری دنیا  کے سامنے عیاں ہو چکا ہے ۔ کشمیریوں کی قربانیاں ضرور رنگ لائیں گی ۔ انہوں نے کہا کہ پوری پاکستانی قوم کشمیریوں کے شانہ بشانہ کھڑی ہے ۔ بھارت نے ہمیشہ پاکستان کے خلاف سازش کی ہے اور اس کے امن خراب کرنے کی کوشش کی ہے ۔ بھارت ہمارا ازلی دشمن ہے اس کے ساتھ تجارت کرنا اور دوستی کرنا کشمیریوں کے زخموں پر نمک چھڑکنے کے متراد ف ہے ۔ کشمیر کے معاملے پر اقوام متحدہ اور عالمی برداری کی خاموشی مجرمانہ طرز عمل ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم بھارت کے ساتھ جنگ نہیں چاہتے لیکن کشمیریوں کے خون کے بدلے دوستی اور آلو پیاز کی تجارت مسترد کرتے ہیں ۔کشمیر کے معاملے پر پوری قوم متحد ہے اگر حکمرانوں نے کشمیریوں کے خوان سے غداری کی تو

قوم ان کا محاسبہ کرے گی۔       

 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس