Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اسلامی سزاﺅں کو ظالمانہ کہنے والے درندوں کے سرپرست ہیں۔حافظ محمد ادریس


لاہور 30 جنوری 2018ء:فحاشی و عریانی شیطانی عمل ہیں۔قرآن پاک میں اللہ کا ارشاد ہے کہ جو لوگ اہل ایمان کے درمیان فحاشی پھیلانے کو پسند کرتے ہیں ان کو آخرت میں تو دردناک عذاب میں مبتلا کیا ہی جائے گا مگر دنیا میں بھی ان کو عبرت ناک سزا دی جائے گی۔ فحاشی و عریانی شیطان کا بدترین حربہ ہے اور اس میں ملوث ہونے والے اللہ و رسول کے نزدیک لعنتی ہیں۔آج میڈیا اور بالخصوص سوشل میڈیا جس طرح اس لعنتی عمل میں ملوث ہے وہ انتہائی شرمناک اور باعث عذاب ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ادارہ معارف اسلامی منصورہ کے کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ان جرائم کا سد بات اسلامی قوانین کے نفاذ اور انگریزی نظام کے خاتمہ میں ہی ممکن ہے۔جو لوگ اسلامی سزاﺅں کو ظالمانہ قرار دیتے تھے اب ان میں سے بھی ایک طبقہ مجرموں کو سرعام پھانسی لٹکانے کا مطالبہ کررہا ہے۔اسلامی سزائیں ظالمانہ نہیں عادلانہ ہیں۔ان کے ذریعے مظلوم کی داد رسی کی جاتی ہے اور ظالم و مجرم کو اس کے گھناﺅنے اور ظالمانہ کرتوتوں کا خمیازہ بھگتنا پڑتا ہے۔ظالم درندوں کے ساتھ اظہار ہمددری کرنے والے انسانیت کے دشمن ہیں اورانسانیت سے عاری ہیں۔الیکٹرانک میڈیا نے جس فحاشی وعریانی کا آغاز کیا تھا اب سوشل میڈیا پر وہ ایک ناسور کی شکل اختیار کرگئی ہے۔اینکر ز ٹی وی پر بیٹھ کر سرعام فاش جھوٹ بولتے ہیں اور عدالت میں اپنے دعوئے کا کوئی ثبوت پیش نہیں کرسکتے۔ ذرائع ابلاغ کو اخلاقی حدود کا پابند بنانے کے لیے قانون سازی کی ضرورت ہے اور خلاف ورزیوں پر قرار واقعی سزا بھی ہونی چاہیے ورنہ ملک و قم کی تباہی کا یہ طوفان کسی کے کنٹرول میںنہ آسکے گا۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس