Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

بااثر خاندان کے تشدد کا نشانہ بننے والے ڈاکٹر ذوالفقار منگی سے ممتاز سہتوکی وفد کے ہمراہ ملاقات


خیرپور( ) 12 جنوری2018  جماعت اسلامی سندھ کے جنرل سیکرٹری ممتاز حسین سہتوایڈووکیٹ کی قیادت میں ایک وفد نے کوٹ ڈجی میں بااثر خاندان کی جانب سے نیروسرجن ڈاکٹر ذوالفقار منگی اور ان کے خاندان کو تشدد کا نشانہ بنانے پر متاثرہ خاندان کے گھر پہنچ کر عیادت، واقعہ کی مذمت اور اپنے بھرپور تعاون کا یقین دلایا، وفد میں ضلع خیرپورکے نائب امیر درمحمد خاصخیلی اور امام بخش لنڈ بھی ان کے ہمراہ تھے۔ممتاز حسین سہتو نے کہا کہ اندرون سندھ ہمیشہ ٹیلنٹ کو برداشت نہیں کیا گیا جہاں جاگیردارانہ سوچ نے غریبوں کو آگے بڑھنے نہیں دیا اس طبقہ نے ظلم کا نظام قائم کیا ہوا ہے جس کے نتیجے میں کوئی بھی غریب آدمی کا بچہ کسی بھی میدان میں آگے نہیں بڑھ سکتا،لیکن کوئی رکاوٹیں توڑ کر آگے نکل آتا ہے تو اس کے ساتھ وہی ہوتا ہے جو ڈاکٹر ذوالفقار منگی کے ساتھ ہورہا ہے۔ایک منظم گروہ نے مظلوم ومحکوم عوام کو اپنے ظلم کا نشانہ بنایا ہوا ہے وہی کھیل ڈاکٹر منگی کے خاندان کے ساتھ کھیلا گیا، ہم اس واقعہ کی سخت مذمت اور ایسی مقتدر قوتوں کو خبردار کرتے ہیں کہ وہ اپنا رویہ تبدیل کردیں ورنہ پہلے بھی اس طرح کی ظالمانہ کاروائیوں کے نتائج بھیانک نکلے ہیں اب وہ وقت قریب ہے کہ جب عوام ان ظالم قوتوں کا گھیراﺅ کرکے احتساب کریں،اس افسوس ناک واقعہ پرحکومتی بے حسی وخاموش تماشائی کردارشرمناک ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف سندھ کی یہ صورتحال ہے تو دوسری طرف قصور واقعہ نے پوری قوم کا سر شرم سے جھکادیا ہے ،یہ حکمرانوں کی مسلسل کرپشن اورفحش پالیسی کا نتیجہ ہے۔ڈاکٹر ذوالفقار منگی نے جماعت اسلامی وفد کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ان کا قصور صرف یہ ہے کہ وہ کراچی میںماہانہ لاکھوں روپے کمانی کی نوکری چھوڑ کر خیرپور میں اپنے آبائی گاﺅںکو ترجیع دیکر عوام کی خدمت کررہا ہوں، نیوروسرجن ہونے کے باجودمعمولی فیس کے عیوض غریب لوگوں کی خدمت کررہا ہوں،وڈیروں کی غلامی اور ان کے گھر جاکر علاج نہ کرنے پر میری بوڑھی والدہ اور بھائی کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔#

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس