Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

معصوم بچی کے قاتل کو جلد ازجلد گرفتار کیا جائے اور نشان عبرت بنایا جائے ۔ذکراللہ مجاہد


لاہور12جنوری 2018ء:امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہد نے قصور میں قتل ہونے والی معصوم بچی کے ساتھ وحشیانہ سلوک اور ظالمانہ قتل پر شدید غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کرپٹ پنجاب پولیس اور نااہل ظالم حکمران سانحہ قصور کے اصل ذمہ دار ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار گذشتہ روز انہوں نے لبرٹی چوک میں سانحہ قصور کے حوالے سے احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ احتجاجی مظاہرے میں جے آئی یوتھ لاہور کے صدر شاہد نوید ملک ، صدر الخدمت فائونڈیشن لاہور عبد العزیز عابد ، صہیب شریف ، قدیر شکیل،اے ڈی کاشف ، علی احمد ڈوگر ایڈووکیٹ سمیت جے آئی یوتھ کے نوجوانوں کی کثیر تعدادنے شرکت کی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ سانحہ قصو ر بچی کے بہیمانہ قتل کے بعد لاش کی بے حرمتی نے پوری دنیا میں ملکی وقار کو نقصان پہنچا یا ہے ۔حکومت عوام کے جان و مال کے تحفظ میں ناکام ہو گئی ہے ۔ احتجاج کرنے والوں پر پولیس کی طرف سے گولیاں برسانا حکمرانوں کے منہ پر طمانچہ ہے ۔وزیر اعلیٰ پنجاب سانحہ قصور کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے فی الفور استعفیٰ دیں۔ معصوم بچی کے قتل کے بعد کرپٹ پولیس کے ہاتھوں شہریوں کی ہلاکت ن لیگ کی ناکام حکومت کا واضح ثبوت ہے ۔انہوں نے کہا کہ ایسا دلخراش وقعہ پنجاب حکمرانوں کی مجرمانہ غفلت کا نتیجہ ہے اس سے پہلے بھی قصور میں بچوں کے ساتھ ذیادتی کیس میں ملوث افراد کی پشت پناہی ن لیگ کے منتخب نمائندے کرتے رہے ہیں اور آج بھی وہ کیس عدالتوں کی فائلوں میں کہیں گم ہو گئے ہیں۔ ذکر اللہ مجاہد نے سپریم کورٹ سے مطالبہ کیا ہے کہ پنجاب حکومت کی جانب سے شہریوں کے ساتھ ظالمانہ سلوک پر سخت نوٹس لیا جائے اور آئی جی پنجاب اور وزیر اعلیٰ پنجاب کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے تب ہی جا کر اصل مجرم سامنے آئیں گے ۔ معصوم بچی کے قاتل کو جلد ازجلد گرفتار کیا جائے اور نشان عبرت بنایا جائے

تاکہ کوئی اس کے بعد ایسی انسانیت سے گری حرکت کرنے سے پہلے درندہ صفت انسان اس قسم کی گری ہوئی حرکت کرنے سے پہلے سو بار سوچے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس