Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

اسلام آباد میں نیپرا سماعت کراچی کے عوام کے ساتھ کھلی زیادتی ہے ۔حافظ نعیم الرحمن


کراچی05 دسمبر 2017ء:امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کے الیکٹرک ٹیرف کے حوالے سے اسلام آباد میں منعقد کی جانے والے نیپرا کے اجلاس پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ نیپرا ،حکومت اور کے الیکٹرک کی ملی بھگت نے کراچی کے شہریوں کا جینا حرام کر دیا ہے ۔نیپرا کے اجلاس کو اسلام آباد میں طلب کر کے کراچی کے شہریوں کے حق پر ڈاکہ ڈالنے کی کوشش کی گئی ہے ۔ہم نیپرا کی اس سماعت کے خلاف عدالت کا درزاہ کھٹکھٹائیں گے۔انہوں نے اسلام آباد میں سماعت کوڈھونگ قرار دیاہے اورکہا کہ کراچی میں بجلی کے ٹیرف کے بارے میں اسلام آباد میں سماعت حکومت ،نیپرا اور کے الیکٹرک کی ملی بھگت اور کراچی کے عوام کے ساتھ کھلی زیادتی کے مترادف ہے ۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی نے ٹیرف میں اضافے کو پہلے ہی ہائی کورٹ میں چیلنج کیا ہوا ہے ۔اس پٹیشن کی سماعت 5دسمبر کو ہائی کور ٹ میں ہوئی جس میں ہائی کورٹ نے نیپرا اور کے الیکٹرک نوٹس جاری کر دیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں سماعت کا انعقاد ایک سازش ہے جس کے تحت کے الیکٹرک کی زیادتیوں کے خلاف جماعت اسلامی کی آواز کو دبانے کی کوشش کی گئی ہے ۔انہوں نے کراچی کے مسائل پر اسلام آباد میں سماعت کو مضحکہ خیز قرار دیا اور کہا کہ اس جعلی سماعت کی نہ کوئی اخلاقی حیثیت ہے اور نہ ہی کوئی قانونی ۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ سماعت فوری طور پر کراچی میں منعقد کی جائے تا کہ جماعت اسلامی اور دیگر متاثرین اور نمائندہ تنظمیں کے الیکٹرک کی لوٹ مار اور حکومت کی زیادتیوں کی نشاندہی کر سکیں ۔انہوں نے کہا کہ اس قسم کے جعلی ہتھکنڈوں سے لوگوں کی آواز کو دبایا نہیں جا سکتا ۔انہوں نے کہا کہ یہ کے الیکٹرک کی خام خیالی ہے کہ وہ نیپرا اور حکومت کی ملی بھگت سے اپنے من مانے اقدامات سے لوٹ مار جاری رکھ سکے گی ۔حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ ہم نے اپنے وکلاء کو ہدایت کی ہے کہ وہ اس غیر قانونی اقدام کو عدالت میں چیلنج کر نے کی تیاری کریں ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس