Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

نو جوان نسل کو اقبال کے فلسفے کو اپنے لیے مشعل راہ بناکر ملی جدوجہد میں اہم کردار ادا کرنا ہوگا


لاہور 9نومبر2017ء:امیر جماعت اسلامی لاہور ذکر اللہ مجاہدنے کہا ہے کہ علامہ محمد ڈاکٹر اقبال نے تحریک پاکستان میں اپنی شاعری اور جدوجہد کے ذریعے جو کردار ادا کیا اس کو کبھی بھی فراموش نہیں کیا جا سکتا ۔ اگر ہمارے سیاستدان بانی پاکستان قائد عظم محمد علی جناح اور علامہ محمد ڈاکٹر اقبال کے افکار پر عمل پیرا ہوتے تو آج پاکستان دنیا میں سپر پاور کی حیثیت حاصل کر لیتا مگر بدقسمتی سے نااہل اور کرپٹ حکمرانوںکی ناقص پالیسیوں کا اندازہ اس بات سے لگا جا سکتا ہے کہ پاکستان کا تصور پیش کرنے والے محسن پاکستان کے یوم پیدائش پر قومی سطح پر سرکاری تعطیل کو منسوخ کردیا گیا ہے اور یہ قومی ہیروز کی کاوشوں کو فراموش کرنے کے مترادف ہے جبکہ ماضی میں قومی ہیروز قائد عظم محمد علی جناح اور علامہ محمد ڈاکٹر اقبال کے یوم پیدائش کے موقع پر سرکاری سطح پر تعطیلات ہوتی رہی ہیں اور ملی و قومی جذبے کے ساتھ قومی ہیروز کا یوم پیدائش جوش وخروش کے ساتھ منانے کا اہتمام کیا جاتا رہا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار گذشتہ روز انہوں نے شاعر مشرق کے مزار پر فاتحہ خوانی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ حکمرانوں کا یوم اقبال کی سرکاری تعطیل بحال کرنے سے گریز ان کے قائد و اقبال کی جانشینی کے دعوئوں کی نفی کرتا ہے ۔ علامہ محمد اقبال کی حیثیت محض ایک شاعر کی نہیں بلکہ و ہ برصغیر کی ان جلیل القدر ہستیوں میں شامل ہیں جنہوں نے اس خطے کے مسلمانوں کو غلامی کی زنجیروں سے نجات دلانے کیلئے جداگانہ قومیت کا احساس اُجاگر کیا اور الگ وطن کا تصور پیش کیا ۔ذکر اللہ مجاہد نے کہا کہ آج یوم اقبال پر حکمران اس حقیقت کو ہر گز فراموش نہ کریں کہ ان کا اقتدار ، دولت اور جاہ جلال پاکستان کا مرہون منت ہے جس کے قیام کیلئے بانیان پاکستان نے جان توڑ جدوجہد کی ۔ یوم اقبال کی سرکاری چھٹی کو منسوخ کرنے کا فیصلہ جس نے بھی کیا اس نے شاعرمشر ق علامہ محمد اقبال سے اپنی کدورت ، بغض اور کینے کا ثبوت دیا ہے۔ انہوںنے کہا کہ نوجوان نسل کو اقبال کے فلسفے کو اپنے لیے مشعل راہ بنا کر ملی جدوجہد میں اہم کردار ادا کرنا ہوگا تاکہ جس پاکستان کا اقبال نے تصور پیش کیا تھا اس کی تکمیلہو سکے ۔ آج ملک وقوم کے مسائل کا حل اقبال کے افکار پر عمل پیرا ہو کر کیا جا سکتا ہے ۔                              

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس