Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

عقیدہ ختم نبوتؐ ہمارے ایمان کا حصہ ہے،علماء اکرام متحد ہوکر غیر مسلم دشمن قوتوں کامقابلہ کریں


لاہور12 اکتوبر2017ء:امیر جماعت اسلامی پنجاب میاں مقصود احمد نے رانا ثناء اللہ کے بیان کہ’’علماء قادیانیوں کو غیر مسلم تسلیم نہیں کرتے،قادیانی خود بھی اپنے آپ کو غیر مسلم نہیں کہتے‘‘پر اپنے شدید ردعمل کااظہارکرتے ہوئے کہاہے کہ راناثناء اللہ کاعقیدہ ختم نبوتؐ کے حوالے سے بیان انتہائی افسوس ناک اور قابل مذمت ہے۔ایسے خیالات ان کے ذہنی دیوالیہ پن کی عکاسی کرتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ عقیدہ ختم نبوتؐ ہمارے ایمان کا حصہ ہے۔جوشخص آنحضرتؐ کوآخری نبی تسلیم نہ کرتاہووہ مسلمان کہلانے کا حق دار نہیں۔راناثناء اللہ بتائیں کونسے علماء اکرام قادیانیوں کو غیر مسلم تسلیم نہیں کرتے؟۔وزیر اعلیٰ پنجاب صوبائی وزیر قانون کو فی الفور برطرف کریں۔انہوں نے کہاکہ حکومت میں شامل کچھ عناصر عقیدہ ختم نبوتؐ کے خلاف سرگرم ہیں۔کبھی وہ حلف نامے میں ترمیم کرنے کی کوشش کرتے ہیں تو کبھی وہ اخباری بیانات دے کر ملک وقوم کے جذبات کو مجروح کرتے ہیں۔پاکستان اسلام کے نام پر وجود میں آیاتھا یہاں صرف اللہ اور اس کے رسولؐ کانظام زندگی ہی نافذالعمل ہوکر رہے گا۔قادیانی ختم نبوتؐ کے حوالے سے اپنی مذموم کارروائیوں میں کبھی کامیاب نہیں ہوسکتے۔انہوں نے کہاکہ جماعت اسلامی نے عوامی حمایت اور تائید سے ماضی میں بھی قادیانیوں کی سازش کو ناکام بنا یا۔پارلیمنٹ میں حلف نامے کی ترمیم کے حوالے سے گھناؤنی سازش کو بے نقاب کیااور ان شاء اللہ آئندہ بھی اس حوالے سے جماعت اسلامی اپنا مثبت کردار اداکرتی رہے گی۔راناثناء اللہ جیسے لوگ بے نقاب ہوچکے ہیں۔میاں مقصوداحمد نے مزیدکہاکہ علماء اکرام متحد ہوکرعقیدہ ختم نبوتؐ اور اسلامی شعائر کے تحفظ کے لیے غیر مسلم قوتوں کی جانب سے ہونے والے حربوں کا مقابلہ کریں۔ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت ملک کے اسلامی تشخص کو ختم کیاجارہا ہے۔انہوں نے کہاکہ کسی بھی شخص کو عوام کے جذبات سے کھیلنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔راناثناء اللہ کا بیان درحقیقت اسلام دشمن قوتوں کو خوش کرنے کی کوشش ہے۔حکومت پنجاب اس سنگین معاملے کا سختی سے نوٹس لے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس