Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

آج اگر خلافت ہوتی تو پوری دنیا کے مسلمان ایک ناقابل تسخیر قوت ہوتے۔راشدنسیم


لاہور12 ستمبر 2017ء:نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان راشد نسیم نے کہاہے کہ60 کے قریب مسلم ممالک ہیں جن کی ایک کروڑ سے زائد سپاہیوں پر مشتمل افواج ہیں مگر روہنگیا مسلمانوں کو گاجر مولی کی طرح کاٹا جارہاہے ۔ اگر ان ممالک میں اسلامی حکومت ہوتی تو کسی یہودی ، عیسائی ہندو یا بدھ مت کو مسلمانوں پر ہاتھ اٹھانے کی جرا ت نہ ہوتی ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں کارکنان کی تربیتی ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر سید لطیف الرحمن شاہ بھی موجود تھے ۔

راشد نسیم نے کہاہے جب سے خلافت ختم ہوئی ہے ، مسلمانوں کا رعب اور دبدبہ ختم ہو چکاہے ۔ آج اگر خلافت ہوتی تو پوری دنیا کے مسلمان ایک ناقابل تسخیر قوت ہوتے لیکن چھوٹی چھوٹی بادشاہتوں میں تقسیم ہونے کے بعد ان کی قوت پارہ پارہ ہوچکی ہے جس کی وجہ سے کشمیر ، فلسطین اور برما سمیت ہر جگہ مسلمانوں کو تختہ ستم بنایا گیا ہے ۔عراق ، افغانستان ، شام اور برما میں لاکھوں مسلمانوں کو شہید کردیا گیاہے ۔ مسلم دنیا میں کہیں بادشاہت ہے کہیں ڈکٹیٹر شپ اور کہیں مغربی جمہوریت موجود ہے مگر کسی جگہ بھی اسلامی حکومت نہیں ۔ انہوںنے کہاکہ حکمران اللہ کا سایہ اور اس کا نمائندہ ہوتاہے مگر آج کے حکمران ظالم و جابر اور عوام کا خون چوسنے والے ہیں جنہیں عوام کی پریشانیوں اور امت کے مسائل سے کوئی سروکار نہیں اور وہ اپنے لیے دنیا بھر کی دولت سمیٹ لینا چاہتے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ اگر اللہ کی حاکمیت قائم نہ ہو تو پھر بندوں کی حکومت بنتی ہے اور وہ فرعون اور نمرود بن کر عوام کا استحصال کرتے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ آج دنیا مسائل کی دلدل میں پھنسی ہوئی ہے جس کی وجہ اللہ کے عادلانہ اور منصفانہ نظام کو چھوڑ کر بندوں کے اپنے بنائے نظام زندگی سیکولرازم ، لبرل ازم اور نیشنل ازم ہیں ۔ یہ نظام انسان کو انسانیت کے اعلیٰ شرف سے محروم کر کے حیوانیت پر مجبور کر دیتے ہیں یہی وجہ ہے کہ آج ہر طرف درندگی ، انسانیت سوز مظالم اور ظلم و تشدد اور بربریت کا دور دورہ ہے ۔ ایک طرف غربت، مہنگائی، بے روزگاری کی وجہ سے لوگ خود کشیاں کر رہے ہیں اور دوسری طرف عالی شان محلوں میں بیٹھے حکمران عیش و عشرت کے مزے لوٹ رہے ہیں ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس