Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

نیب نے ستمبر کے اندر 436 لٹیروں کے خلاف کاروائی شروع نہ کی تو اکتوبر کے پہلے ہفتے میں نیب کے دفاتر کا گھیراﺅ کریں گے۔سراج الحق


لاہور 11ستمبر 2017 ء:امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے راولپنڈی میں لاہور سے راولپنڈی تک جماعت اسلامی کے احتساب مارچ کے آخری جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ نیب نے ستمبر کے اندر 436 لٹیروں کے خلاف کاروائی شروع نہ کی تو اکتوبر کے پہلے ہفتے میں نیب کے دفاتر کا گھیراﺅ کروں گا۔ غاروں سے زیادہ دہشتگردی اقتدار کے ایوانوں میں ہے ۔ جس طرح قوم نے قائداعظم کا ساتھ دیا تھا اور انہوں نے قوم کو پاکستان کا تحفہ دیا تھا ، قوم میرا ساتھ دے تو میں قوم کو ایک کرپشن فری پاکستان دینے کا وعدہ کرتا ہوں ۔ نائن الیون 2017 ءتک امریکہ ثابت نہیں کر سکا کہ اس واقعہ میں کوئی مسلمان ملوث ہے ۔ انہوں نے کہاکہ برما میں مسلمانوں کی نسل کشی جاری ہے ۔ معصوم بچوں کو جلایا جارہاہے ، ماﺅں بہنوں بیٹیوں کی عصمت دری ہورہی ہے اور انہیں برہنہ کر کے درختوں سے لٹکایا جارہاہے ، مساجد اور قرآن پاک کو نذر آتش کیا جارہاہے ۔ پاکستان کے وزیراعظم کو 21کروڑ عوام کی نمائندگی کرتے ہوئے طیب اردگان کی طرح برما کے مظلوم مسلمانوں کے پاس پہنچنا چاہیے تھا مگر افسوس ہے کہ اتنے بڑے سانحہ کے بعد بھی اسلام آباد میں قبرستان کی سی خاموشی اور بے غیرتی کار اج ہے اور جو برما کے مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتا ہے ، حکمران اس کا راستہ روکتے ہیں ۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ برما کا سفارتخانہ بند کر کے اس کے سفیر کو فوراًملک بدر کیا جائے اور اسلامی دنیا برما کے ساتھ ہر قسم کے تعلقات ختم کرے ۔ حکمرانوں نے برما کے سفارتخانے کی حفاظت کو اپنا فرض سمجھاہے ۔ شاہینوں کی قیادت کرگسوں اور شیروں کی قیادت ڈرپوک گیدڑوں کے ہاتھ میں ہے ۔ بزدل حکمرانوں نے قوم کے جذبات کی ترجمانی نہیں کی ۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان ایک نظریاتی مملکت ہے جہاں امت تکلیف میں ہو اس کا ساتھ دینا ہم پر فرض ہے ۔ ہمیں کشمیری ، فلسطینی اور برما کے مظلوم مسلمانوں کا ساتھ دینا چاہیے ۔ ہمیں آج محمد بن قاسم اور محمود غزنوی جیسی جرا ¿ت مند قیادت کی ضرورت ہے ۔ قائد اعظم نے ٹھیک کہاتھاکہ میری جیب میں کھوٹے سکے ہیں ان کھوٹے سکوں نے ملک اور قوم کو یرغمال بنالیا۔ حکمران امریکہ اور بھارت سے تو ڈرتے ہیں مگر اللہ کا خوف کھانے کو تیار نہیں ۔ امریکہ نے ہر مشکل وقت میں ہمارے ساتھ دھوکہ کیا ۔ حکمران امریکہ کی بجائے اللہ سے ڈرتے تو آج ملک مشکلات میں نہ پھنسا ہوتا۔ سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ حکمران واشنگٹن کی بجائے مکہ مکرمہ کو اپنا قبلہ بنائیں ۔ پاکستان کو اللہ نے ایٹمی قوت اور بے پناہ وسائل سے مالا مال کیا اور محنتی نوجوانوں کی قوت سے نوازا ہے ۔ پاکستان کو کرپٹ مافیا نے یرغمال بنایاہے ۔ یہ سیاستدان نہیں لٹیروں کا ٹولہ ہے ان کی اصل جگہ اڈیالہ جیل ہے ۔ یہ پارٹیاں اور جھنڈے بدلتے ہیں مگر اپنے کرتوت بدلنے کو تیار نہیں ۔ انہوںنے کہاکہ اگر ملک سے کرپشن ختم ہو جائے اور لوٹی گئی 375 ارب ڈالر کی رقم واپس ملک میں آ جائے تو ہم عوام کو تعلیم ، صحت ، روزگار اور بجلی و گیس کی سہولتیں مفت دے سکتے ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ کرپشن غریب نہیں وی آئی پیز کرتے ہیں ۔ ان سیاسی پنڈتوں اور معاشی دہشتگردو ں کا محاسبہ کرناہوگا ۔ عوام کو کرپٹ مافیا کے احتساب کے لیے اٹھناہوگا ۔ نوازشریف کی صورت میں کرپشن کا ایک بت گرا ہے ، ابھی 436 بت کھڑے ہیں ان بتوں کو پاش پاش کرنا پڑے گا تب جاکر ملک کرپشن سے پاک ہوگا۔ کرپشن کے ہر سومنات کو گراناہوگا ۔ انہوں نے کہاکہ حکمران غریب عوام کا خون چوس رہے ہیں ۔ نوجوان گردے بیچنے پر مجبور ہیں میں اس استحصالی ظالمانہ سے بغاوت کا اعلان کرتاہوں ۔

سابق ممبر قومی اسمبلی، نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان میاں محمد اسلم نے جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ چوروں اور لٹیروں کی جگہ اقتدار کے ایوان نہیں ، اڈیالہ جیل ہے اور ہم ان لٹیروں کو ان کے اصل مقام تک پہنچا کر دم لیں گے ۔ پاکستان کو اب کوئی لٹیرالوٹ نہیں سکے گا ۔ کرپشن کے خلاف سراج الحق کی تحریک کامیابی سے ہمکنار ہوکر رہے گی ۔ انہوں نے کہاکہ عوام کو ان کے چھینے گئے بنیادی حقوق دلانے کے لیے ہمیں ان لٹیروں کو ایوانوں سے بھگانا ہوگا ۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے قائم مقام امیر جماعت اسلامی پنجاب مولانا جاوید قصور ی نے کہاکہ اگر قوم کرپشن سے پاک پاکستان دیکھنا چاہتی ہے تو پھر اسے سینیٹر سراج الحق کا ساتھ دیناہوگا ۔ سینیٹر سراج الحق ملک کی واحد شخصیت ہیں ، جنہیں سپریم کورٹ نے صادق اور امین ہونے کا سرٹیفکیٹ دیا ہے ۔ سراج الحق کی پوری ٹیم کے کسی ممبر پر کوئی انگلی نہیں اٹھا سکتا ۔ جماعت اسلامی کے سینکڑوں لوگ قومی و صوبائی اسمبلیوں اور سینیٹ کے ممبر رہے ، مگر کسی کے دامن پر کرپشن کا کوئی داغ نہیں ۔ قوم کو سراج الحق کے ہاتھ مضبوط کرنا ہوں گے ۔جلسہ سے سید عارف شیرازی نے بھی خطاب کیا ۔ اس موقع پر ڈپٹی سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی اظہر اقبال حسن ، محمد اصغر ، امیر العظیم ، زبیر فاروق ، شمس الرحمن سواتی ، صہیب کاکا خیل اور زبیر احمدگوندل بھی موجود تھے ۔احتساب مارچ کے راولپنڈی پہنچنے پر اہالیان راولپنڈی نے مارچ کے شرکاءکا آتش بازی کے شاندار مظاہرے سے استقبال کیا۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس