Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

لاہور تا اسلام آباد احتساب مارچ کا مقصد ان 436 لوگوں کا احتساب ہے جن کے نام پانامہ لیکس میں ہیں ۔سراج الحق


لاہور 10ستمبر 2017ء:امیر جماعت اسلامی پاکستا ن سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ میں آج لاہور تا اسلام آباد احتساب مارچ کر رہاہوں جس کا مقصد ان 436 لوگوں کا احتساب ہے جن کے نام پانامہ لیکس میں ہیں ۔ نوازشریف کی نااہلی سے احتساب کاعمل مکمل نہیں ہوا ۔ عوام نے سپریم کورٹ کو مینڈیٹ دیا ہے کہ وہ کرپٹ بیوروکریسی جرنیلوں اور ججوں سمیت جس نے بھی پاکستان کو لوٹا ہے ، ان کو احتساب کے کٹہرے میں لائے اور لوٹی گئی قومی دولت واپس لینے کے لیے ایک نظام بنائے تاکہ ملک کو لوٹنے والوں سے حساب برابر کیا جاسکے ۔ نوازشریف کو سپریم کورٹ نے نہیں ، اللہ نے پکڑا ہے ۔ نوازشریف نے رات کے اندھیرے میں عاشق رسول ممتاز قادری کو شہید کروایا اور پھر لوگوں کو اس کے جنازے میں شرکت سے روکنے کی کوشش کی ۔ اسلامی پاکستان کو سیکولر ملک بنانے کے دعوے کیے اور دوبارآئین توڑنے والے مشرف کے حواریوں کو حکومت میں اعلیٰ عہدوں سے نوازا ۔ جماعت اسلامی پاکستان کو امریکی آلہ کاروں سے نجات دلانے کی جدوجہد کر رہی ہے ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے جڑانوالہ میں بڑے جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ 

سینیٹر سرا ج الحق نے کہاکہ سپریم کورٹ ان 436 لوگوں کا احتساب کرے جن کا نام پانامہ لیکس میں شامل ہے ۔ نوازشریف کی نااہلی کا فیصلہ درست مگر جب تک سب کا احتساب نہیں ہوتا ، یہ فیصلہ نامکمل ہے ۔ پانامہ لیکس میں جرنیلوں ، بیوروکریسی ، ججز سب کے نام ہیں ،ان سب کا احتساب کرنے اور لوٹی دولت واپس لانے کا اختیار قوم نے سپریم کورٹ کو دیاہے ۔ انہوں نے کہاکہ اللہ نے پاکستان کو معدنی وسائل اور محنتی عوام سے نوازا ہے پھر نوجوان ڈگریاں جلانے پر مجبور کیوں ہیں اور لوگ اپنے گردے اور اپنے بچے بیچنے پر کیوں مجبور ہیں ۔ لاکھوں لوگ تعلیم ، صحت اور روزگار جیسی سہولتوں سے محروم ہیں اور حکمران دونوں ہاتھوں سے دولت سمیٹ رہے ہیں ۔حکمرانوں نے خود دولت لوٹ کر سات پشتوں کے لیے خزانے جمع کرلیے اور عوام دو وقت کے کھانے سے محروم ہیں ۔ ملک کو چند ظالم وڈیروں ، جاگیرداروں اور سرمایہ داروں نے کنگال کر دیاہے ۔ مسلح دہشتگرد بھی خطرناک ہیں مگر ایوانوں میں بیٹھے دہشتگرد زیادہ خطرناک ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ ملک کو دیانتدار قیادت اور انقلاب کی ضرورت ہے ۔ یہاں افراد کی نہیں ، قانون اور آئین کی حکمرانی چاہتے ہیں ۔ ہم نے احتساب کے لیے تحریک شروع کی ہے ، صرف نوازشریف کے احتساب سے یہ تحریک ختم نہیں ہوگی ۔انہوں نے کہاکہ پرویز مشرف اور اس کے ٹولے نے دو بار آئین کو توڑا مگر وہ دبئی میں بیٹھا داد عیش دے رہاہے ۔ نوازشریف اب بھی پوچھتے ہیں کہ مجھے کیوں نکالا ۔ انہیں اپنے جرائم کا اعتراف کر کے توبہ کرنی چاہیے ۔ انہوں نے کہاکہ ہم پاکستان کو اسلامی و فلاحی ریاست بنانے کے لیے عوام کی تائید چاہتے ہیں تاکہ عام آدمی اقتدار کے ایوانوں تک پہنچ سکے ۔ غریب نے قربانی دے کر پاکستان بنایا تھا اور آج بھی پاکستان کے لیے قربانی غریب دے رہا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ امریکہ نے ہمیشہ پاکستان کو دھوکا دیا لیکن حکمران ستر سال سے اس کی گود میں بیٹھے ہوئے ہیں ۔ امریکہ اسلامی ممالک میں اپنے آلہ کارحکمران تیار رکھتاہے جب ایک گھوڑا ناکام ہوتاہے تو دوسرے کو لے آتاہے ۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کے تمام مسائل کا حل نظام مصطفےٰ کا نفاذ ہے ۔ عوام سانپوں کے منہ میں دودھ ڈالنے کی بجائے دیانتدار قیادت کا انتخاب کریں ۔ ہم عوام کے حقوق کی جدوجہد کرتے رہیں گے ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس