Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

اہم خبریں

سرکاری اداروں میں سیٹوں میں کمی ،غریب کے بچے کو تعلیم سے محروم کرنا ہے:انیب افضل


لاہور31جولائی2017ء: ہیلی کالج آف کامرس پنجاب یونیورسٹی نے پچھلے سال بی کام آنر کی سیٹوں میں 200سیٹوں کی کمی کی اور طلبہ وطالبات کو کہا گیا کہ سیٹوں میں کمی کی وجہ ہیلی کالج آف کامرس میں بی ایس اکاﺅنٹنگ اینڈ فائنانس کا آغاذ کرنا ہے مگر تاحال بی ایس شروع نہیں کیا گیا اور سیٹوں میں کمی کر دی گئی ان خیالات کا اظہا رناظم اسلامی جمعیت طلبہ جامعہ پنجاب علاقہ وسطی نے کیا ان کا مزید کہنا تھا کہ سرکاری اداروں میں سیٹوں میں کمی نجی اداروں کو نوازنے کے مترادف ہے یہ ایک سازش کے تحت ہو رہا ہے جس کا مقصد غریب بچوں کو تعلیم سے دور کرنا ہے اس موقع پر ناظم اسلامی جمعیت طلبہ ہیلی کالج آف کامرس بلال ظہور کا کہنا تھا کہ ہیلی کالج آف کامرس پنجاب یونیورسٹی میں بی کام کی سیٹیں 600سے کم کر کے400 کر دی گئی ہیں اور ایم کام کی سیٹوںمیں بھی کمی کی گئی ہے کالج انتظامیہ نے طلبہ و طالبات کو کہا تھا کہ ایک ڈگری کا انعقاد کیا جائے گا مگر جس پر تاحال کوئی پیش رفت نہیں کی گئی ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ طلبہ و طالبات کو ان کے حق سے دور نہ کیا جائے اورجلد واضح کیا جائے کہ کونسی ڈگری کب شروع کی جا رہی ہے یا جو سیٹوں می کمی کی گئی ہے ان کو واپس لیا جائے اور غریب طلبہ و طالبات کی تعلیم کو یقینی بنائے جائے ۔بلال ظہور نے کہا کہ اس سال ہیلی کالج آف کامرس کی جانب سے بچوں کو ایم بی اے شروع کرنے کا کہا جا رہا جو کہ پہلے وعدوں کی نظر ہو رہا ہے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس