Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

توانائی بحران سے قومی معیشت کو محتاط اندازے کے مطابق ایک سوا ارب ڈالر سے زیادہ کا نقصان ہوگیاہے ۔لیاقت بلوچ


 لاہور 19اپریل 2017 ء: جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ توانائی بحران سے قومی معیشت کو محتاط اندازے کے مطابق ایک سوا ارب ڈالر سے زیادہ کا نقصان ہوگیاہے ۔ توانائی کے بحران سے جی ڈی پی کو بڑا نقصان ہوا ہے لیکن حکومت غلط اعدادو شمار سے قوم کو دھوکہ دے رہی ہے ۔ توانائی ماہرین بار بار اور بروقت توانائی بحران اور حل کی نشاندہی کرتے رہے ہیں لیکن حکومت، کچن کیبنٹ اور فیصلہ سازوں نے اس توجہ کو نظر انداز کیا اور آواز کو دبادیا ۔ وزیراعظم کی بدترین لوڈشیڈنگ پر برہمی آخر کس پر ہے ،وہ خود اس بحران کے ذمہ دار ہیں ۔ جلسوں میں لوڈشیڈنگ کے خاتمے کے اعلانات کن اعدادو شمار پر کررہے تھے ۔ غلط ، فرضی اور بے بنیاد معلومات کون فراہم کرتارہاہے ۔ وزیراعظم کو جان لینا چاہیے کہ توانائی بحران سے معاشی و معاشرتی خسارہ ملک و ملت کے لیے جان لیوا ہے ۔ لاکھوں افراد روزگار سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے جماعت اسلامی یوتھ کی رابطہ عوام مہم اور پانامہ کیس کے فیصلے کے حوالے سے بلائے گئے خصوصی اجلاس کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔اجلاس میں نائب امرا اسد اللہ بھٹو ، ڈاکٹر فرید احمد پراچہ ، ڈپٹی سیکرٹری جنرل اظہر اقبال حسن ، امیر العظیم ، صدر جے آئی یوتھ زبیر گوندل و دیگر بھی شریک تھے ۔
لیاقت بلوچ نے کہاکہ معاشی بحران کا المناک پہلو یہ ہے کہ بے روزگار ہونے والے افراد میں اکثریت ان افراد کی ہے جو خاندان کے واحد کفیل ہیں ۔ ملک میں روزگار اور سماجی بہبود کے بحران نے جرائم ، عدم برداشت ، غیر اخلاقی کاروائیوں کو فروغ دیاہے ۔ تخریب کاری و دہشتگردی کے لیے وافر تعداد میں دشمن کو سہولت کار مل رہے ہیں ۔ جماعت اسلامی 28 اپریل کو بدترین لوڈشیڈنگ ، تجارت و صنعتی بحران ، کراچی میںK الیکٹرک کے عوام سے ناروا سلوک پر ملک گیر احتجاج کرے گی ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس