Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

کشمیریوں کاقتل عام بند نہ ہواتوسیز فائر لائن کو پاؤں تلے روندکراپنے بھائیوں کی مدد کریں گے۔عبدالرشیدترابی


 باغ19اپریل 2017ء: جماعت اسلامی آزاد جموںو کشمیر کے امیر و ممبر قانون ساز اسمبلی عبدالرشید ترابی نے کہا ہے کہ نریندر مودی مقبوضہ کشمیر میں کشمیریوں کی نسل کشی کر رہا ہے ، عالمی برادری کی خاموشی لمحہ فکریہ ہے ۔ہندوستانی افواج نے کشمیریوں کا قتل عام بند نہ کیا تو قومی مشاورت سے سیز فائر لائن کو پائوں تلے روندھ کر اپنے بھائیوں کی مدد کریں گے،اس کے نتیجے میں جو بھی حالات پیدا ہوں گے اس کی ذمہ داری نریندری اور عالمی برادری پر عائد ہوگی ، حکومت پاکستان مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کے لیے فوری طور پر نائب وزیر خارجہ کا تقرر کرے ، آزاد خطے کو بجلی کی لوڈشیڈنگ فری زون قراردیا جائے ۔حکومت پاکستان مسئلہ کشمیر پر او آئی سی کا سربراہی اجلاس بلائے۔ رابطہ عالم اسلامی کی کانفرنس میں کشمیریوں کی نمائندگی کا موقع ملا ایک سو پچاس ممالک کے مندوبین کو مسئلہ کشمیر کی تازہ ترین صورت حال سے آگاہ کیا ،کانفرنس میں شریک مندوبین نے ہر فورم پر مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کا عہد کیا ۔ حکومت پاکستان اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مسئلہ کشمیر کی سنگین صورت حال کو اٹھائے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے باغ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے عبدالرشید ترابی نے کہا کہ او آئی سی کے بعد رابطہ عالم اسلامی اسلامی ممالک کا سب سے بڑا فورم ہے ۔ رابطہ عالم اسلامی کی کانفرنس میں شریک حکومتوں کے نمائندے ، علمائے کرام ، سکالرز ، اسلامی تحریکوں کے سربراہان سمیت اعلیٰ سطح کے لوگوںکو مسئلہ کشمیر کی تازہ ترین صورت حال سے آگاہ کیا پوری مسلم دنیا میں مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کے قتل عام پر تشویش پائی جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ کشمیر اور فلسطین سمیت دنیا میں جہاں بھی مسلمانوں کا قتل عام کیا جا رہا ہے ا سکے پیچھے ہندوستان اور اسرائیل کی سازشیں شامل ہیں ، یہ دونوں ممالک مسلمانوں کے قتل عام میں برابر کے شریک ہیں اور ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کرنے کے ساتھ ساتھ حکمت عملی بھی شیئر کر رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان اور اسرائیل کے عزائم پوری امت کے خلاف ہیں اور پوری امت کو مل کر ان کے خلاف جدوجہد کرنی ہوگی۔ عبدالرشید ترابی نے کہا کہ کشمیری اپنے حصے کا کام کر رہے ہیں آزادی کی اس تحریک کو منزل تک پہنچانے میں حکومت پاکستان کا فیصلہ کن کردار بنتا ہے ، حکومت پاکستان فوری طور پر نائب وزیر خارجہ کا تقرر کرے صرف مسئلہ کشمیرکو دنیا میں اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ مقبوضہ کشمیر میںہونے والے مظالم پر نظر رکھے اور ان کے تدارک کے لیے اپنا کردار ادا کرے۔ہندوستان مکروہ چہرے کو عالمی سطح پر بے نقاب کرنے کے لیے بھرپور سفارتی مہم کے ساتھ ساتھ وفود بھی بھیجے جائیں اور وزیر اعظم پاکستان خود اہم ممالک کے دارالحکومتوں کا دورہ کریں اور ان کو کشمیر کی سنگین صورت حال سے آگاہ کریں ۔نریندر مودی حالات کو جنگ کی طرف دھکیل رہے ہیں اور یہ جنگ ایٹمی جنگ ہوگی جس سے پوری دنیا متاثرہوگی ، دنیا کو یہ باور کرانے کی ضرورت ہے کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان مسئلہ کشمیر پرہونے والی ایٹمی جنگ چاروں براعظموں کو متاثر کرے گی ۔ انہوں نے کہا کہ اپنے دورہ سعودی عرب کے دوران وہاں مختلف علاقوں او آئی سی کے ہیڈ کوارٹر اور سفارت خانے کا دورہ کیا انہوں نے کہا کہ اس وقت یمن اور سعودی عرب کی جنگ کی وجہ سے ہزاروں پاکستانی اور کشمیری مشکلات کا شکار ہیں اور ان کو سال بھر کی تنخواہیں نہیں ملیں ان کی ان مشکلات کو سفارت خانے تک پہنچایا ہے اور انہوں نے یقین دہانی کروائی کہ وہ یہ مسائل حل کریںگے۔انہوں نے کہا کہ آزاد کشمیر کو لوڈشیڈنگ فری زون قرار دیا جائے ۔خیبر پختون خواہ میں گیس پیدا ہوتی ہے تو وہاں کے عوام کو ایک تو گیس سستی فراہم کی جاتی ہے پہلے اپنے عوام کو پھر دوسرے صوبوں میں بھیجی جاتی ہے اسی طرح آزاد کشمیر میں بجلی پیدا ہوتی ہے پہلے یہاں کی ضرورت کو پورا کیا جائے یہاں کے لوگوں کو سستی بجلی فراہم کی جائے پھر باقی صوبوں میں بھیجی جائے۔وزیر اعظم آزاد کشمیرواپڈا اور وفاق سے بات چیت کر کے بجلی کی لوڈ شیڈنگ ختم کرانے میں اپنا کردار ادا کریں۔باغ سمیت جن اضلاع میں چھوٹے ہائیڈل پراجیکٹ پر اخراجات کیے گئے ہیں ان کو قابل رفتار بنایا جائے۔اس موقع پر انہوں نے کہا کہ پونچھ سمیت آزاد کشمیر کے دیگر اضلاع میں سوشل میڈیا پر توہین رسالت کے واقعات سامنے آئے ہیں اس حوالے سے قانون موجود ہے اس کے مطابق سخت کارروائی کرتے ہوئے ایسے لوگوں کو عبرت کا نشان بنایا جائے تو یہ سلسلہ رک جائے گا۔انہوں نے کہا کہ جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے اس حوالے سے قابل فخر فیصلے کیے ہیں ، اور اس کے نتیجے میں وزیر داخلہ نے خوش آئند اقدامات کیے ہیں آزاد کشمیر حکومت بھی ان گستاخوں کے خلاف کارروائی کرے۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس