Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

5فروری یوم یکجہتی کشمیر کے حوالے سے سرکلر

بخدمت امرائے صوبہ ،حلقہ اور اضلاع جماعت اسلامی پاکستان
بخدمت قیمہ ،ناظمات صوبہ اور اضلاع حلقہ خواتین جماعت اسلامی پاکستان
بخدمت ذمہ داران برادر تنظیمات جماعت اسلامی پاکستان

السلام علیکم ورحمتہ اللہ وبرکاتہ
اس مرتبہ 5فروری یوم یکجہتی کشمیر ایک ایسے موقع پر آ رہاہے کہ جب حکمرانوں کے مسلسل بیانات و اقدامات یہ واضح کررہے ہیں کہ حکمرانوں نے مسئلہ کشمیر کو یکسر نظر انداز کردیا ہے۔ بھارت سے دوستی کی پینگیں ،بھارت کو پسندیدہ ترین ملک قرار دینے اور ویزاختم کرنے کی تجاویز عروج پر ہیں جبکہ یہ اقدام جہاد کشمیر سے عملاً روگردانی ، مسئلہ کشمیر سے کامل چشم پوشی ،مظلوم کشمیریوں کے زخموں پر نمک پاشی اور ان کی پیٹھ میں چھرا گھونپنے کے مترادف ہوں گے۔اسی طرح بھارت کی طرف سے جنگ کی تیاریاں اور پاکستان کو دھمکیاں بھی جاری ہیں۔
موجودہ حالات میں مقبوضہ جموںو کشمیر کے عوام بجا طور پر پاکستان کے عوام سے توقع رکھتے ہیں کہ اُ ن کے حق خودارادیت اور بھارتی قابض افواج کی درندگی اور ہندوستان کے پنجہ استبداد سے نجات کے لئے نہ صرف حمایت جاری رکھی جائے گی بلکہ حکومت پر بھی مضبوط اور دوٹوک موقف اپنانے اور مسئلہ کشمیر سلامتی کونسل میں لے جانے کا دباﺅ ڈالا جائے گا۔
محترم سیدمنورحسن صاحب امیرجماعت اسلامی پاکستان نے ہدایت کی ہے کہ5فروری 2014ءحسب سابق اور حسب روایت بھرپور اور شاندار طریقہ سے بطور یوم یکجہتی کشمیر منایا جائے اور اس موقع پر۔
l۔ پوری قوم حکومت سے مطالبہ کرے کہ :
٭۔ متفقہ قومی موقف سے روگردانی ترک کی جائے اور واضح اعلان کیا جائے کہ مسئلہ کشمیر کا حل اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق اہل کشمیر کی آزادانہ رائے شماری کے سو اکچھ اورنہیں ہوسکتا۔
٭ ۔ ضرورت اس امرکی ہے کہ بین الاقوامی کشمیر کانفرنس بلائی جائے ۔ جس میں کشمیر کے مقبوضہ و آزاد دونوں اطراف کی قیادت کو مدعو کیا جائے اور جدوجہد آزادی کشمیر کے واضح اہداف طے ہوں اوران کے حصول کے لئے نقشہ کار مرتب ہو ۔
l۔ اس سلسلہ میں ہفتہ یکجہتی کشمیرکے درج ذیل پروگرام منعقد کئے جائیں گے۔
٭۔ 31 جنوری2014ء سے پہلے علماءکرام و ائمہ حضرات سے ملاقاتیں کی جائیں اور ان سے اپیل کی جائے کہ وہ 31 جنوری 2014ءبروز جمعة المبارک کے اپنے خطبات جمعہ اور دعاﺅں میں اپنے مظلوم کشمیری بھائیوں سے اظہار یکجہتی کریں ۔ نماز جمعہ کے بعد مساجد کے باہر کارکنان بینرز لے کر کھڑے ہوں اور 5فروری کی ریلیوں کے سلسلہ میں ہینڈ بلز تقسیم کیے جائیں ۔
٭۔ یکم فروری 2014بروزہفتہ میڈیاسنٹرز پر جہاں جہاں ممکن ہو بڑے اور بھرپور سیمینارز منعقد کئے جائیں جن میں مسئلہ کشمیر پر اظہار خیال ہو ، متفقہ قراردادیں منظور کی جائیں۔
٭۔2،3اور4فروری 2014ءبروز اتوار، پیراور منگلیونین کونسل کے لیول پر 5فروری کی ریلیوں کے لیے گھر گھر دعوت دی جائے۔ اس سلسلہ میں مختلف مقامات پر کارنرمیٹنگز بھی منعقد کی جائیںاور جہاں ممکن ہو موٹر سائیکل ریلیوں کا اہتمام کیا جائے۔
٭۔ 5۔ فروری 2014ءبروزبدھ ڈویژنل ہیڈکوارٹرز پر بھرپور بڑی ریلیاں اور ضلعی ہیڈ کوارٹرز پر مظاہرے ہوں ۔ ان ریلیوں و مظاہروں میں خواتین اور بچوں کو بھی شریک کیاجائے ۔ان تمام پروگراموں کی موثر وبھرپور نگرانی صوبائی نظم کریں گے۔
٭۔ اسلام آباد میں اقوام متحدہ کے افسران کو یاد داشت پیش کی جائے۔
l۔ یکم فروری سے 5فروری 2014ءمیں کسی ایک دن اسلامی جمعیت طلبہ اور شباب ملی کے نوجوان واہگہ بارڈرپر پلے کارڈ اٹھائے، اہل کشمیر سے یکجہتی کابھرپور مظاہرہ کریں ۔جماعت اسلامی صوبہ پنجاب اور جماعت اسلامی لاہور کانظم اس کااہتمام کرائے۔
l۔ محترم امیرجماعت کی طرف سے تمام اسلامی تحریکات کے سربراہوں کو خط بھیجا جائے گا کہ وہ بھی 5فروری کو اپنے اپنے طور پر اہل کشمیر سے اظہار یکجہتی کریں ۔
l۔ اسلامی کانفرنس کے رکن ممالک کی تمام حکومتوں کو اس مسئلہ پر متوجہ کیا جائے گاکہ مسئلہ کشمیرپر اسلامی کانفرنس کا اجلاس طے کیاجائے ۔
l۔ 5فروری 2014ءکی اسلام آباد اور صوبائی ہیڈکوارٹرپریکجہتی کشمیرریلیوں کی قیادت کے لئے مرکزی قائدین سے حسب ذیل پروگرام کے مطابق شرکت کی گزارش کی گئی ہے۔براہ مہربانی آپ پروگرام کے سلسلہ میں قائدین سے براہ راست رابطہ رکھیں اور انہیں پروگرام کی تفصیل سے بر وقت مطلع فرمائیں۔نیز صوبائی نظم ضلعی مقامات کے لئے خود ہی مقررین کا طے کرلیں ۔
اسلام آباد: سید منورحسن صاحب امیر جماعت اسلامی پاکستان، ڈاکٹر محمد کمال صاحب،میاں محمد اسلم صاحب
کراچی: لیاقت بلوچ صاحب قیم جماعت اسلامی پاکستان،ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی صاحب ،حافظ نعیم الرحمن صاحب
مظفرآباد: عبدالرشید ترابی صاحب
لاہور: فرید احمد پراچہ صاحب، ڈاکٹر سید وسیم اختر صاحب ،میاں مقصود احمد صاحب
پشاور : سراج الحق صاحب ، پروفیسر محمد ابراہیم صاحب ،صاحبزادہ طارق اللہ صاحب
کوئٹہ : عبدالمتین اخوندزادہ صاحب ،مولانا عبدالحق ہاشمی صاحب
آپ سے گزارش ہے کہ تمام سرگرمیوں کی میڈیا کوریج کے حوالے سے خصوصی اہتمام کیا جائے ۔ بالخصوص پرنٹ میڈیا کے علاوہ الیکٹرانک میڈیا کی کیمرہ کوریج کی طرف بھی خصوصی توجہ دی جائے اور سرگرمیوں کی تفصیل فوری طور پر مرکز کو فیکس اور ای میل کے ذریعے بھجوائی جائے۔
امید ہے یہ ہمہ جہتی پروگرامات و سرگرمیاں ایک بار پھر جدوجہد آزادی ءکشمیرکو وہ حمایت و قوت اور توانائی فراہم کریں گی کہ پاکستان اپنی شہ رگ کو ہندو سامراج کے چنگل سے چھڑانے میں کامیاب ہوسکے ۔
اللہ تعالیٰ ہمارا حامی وناصر ہو ،ہمارے فیصلوں میں برکت عطا فرمائے اور ان پر عمل درآمد کی توفیق بھی ،آمین۔
والسلام
خاکسار
(لیاقت بلوچ )
قیم جماعت اسلامی پاکستان
 

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس