Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

یوم توبہ و استغفار کے حوالے سے قیم جماعت کا جماعت کے ذمہ داران کو خط

بخدمت امرائے صوبہ ،حلقہ اور اضلاع جماعت اسلامی پاکستان
بخدمت قیمہ ،ناظمات صوبہ اور اضلاع حلقہ خواتین جماعت اسلامی پاکستان
بخدمت سربراہان برادر تنظیمات جماعت اسلامی پاکستان
بخدمت ذمہ داران و ناظمین شعبہ جماعت اسلامی پاکستان

السلام علیکم ورحمة اللہ وبرکاتہ
آپ پر رب رحیم کی رحمتیں ہوں۔
پاکستان گذشتہ ایک عرصے سے بالخصوص جن حالات سے دوچار ہے اس کی سنگینی آج کل اپنے عروج پر ہے۔ کوئٹہ، کراچی سے لے کر پشاور اور لاہور تک انسانی جانیں اور املاک جس بے دردی اور بے رحمی کے ساتھ لوٹی جارہی ہیں پاکستان کی 63سالہ تاریخ میں اس کی کوئی مثال نہیں ملتی۔ بدامنی ، دہشت گردی ،فسادات نے پوری قوم کو اپنی لپیٹ میں لے رکھاہے۔ قومی سطح کی قیادتیں اور حکمران طبقات اس وژن ،دلسوزی ، قوت فیصلہ اور جرات سے بالکل عاری ہیں جن کو بروئے کار لا کر کسی قوم کو بحرانوں سے نجات دلائی جاسکتی تھی ۔ اس پر مُستزاد پاکستانی قوم کی حالت جو گروہ در گروہ تقسیم ہوچکی ہے۔ علاقائی ، لسانی ، مسلکی ،طبقاتی جس قدر تقسیم پائی جاتی ہے ان میں ہم منقسم ہیں ۔ ہر طبقہ اپنے مفادات کا اسیر ہے۔ پاکستان کی سالمیت کے خلاف بیرونی سازشیں اب ڈھکے چھپے نہیں، علی الاعلان ہو رہی ہیں ۔ نظریے کی شکست و ریخت سے لے کر جغرافیائی تقسیم کی باتیں اب دن کی روشنی اور ڈنکے کی چوٹ پر کی جارہی ہیں۔ اور پوری قوم اب بھی اسباب کی دنیا میں اپنے مسائل کا حل تلاش کررہی ہے۔ کہیں ایسا تو نہیں کہ ہمارا رب ہم سے ناراض ہو !!
گذشتہ 5سال بظاہر اقتدار عوام کے منتخب نمائندوں کے ہاتھ میں رہا۔ مگر عوام کے جان و مال کے تحفظ ، حالات کی بہتری کا گراف آج تنزلی کی بدترین صورت میں ہے۔ کیا یہ بالکل وہی حالات نہیں جب زمین اپنی وسعتوں کے باوجود اس وطن کے باسیوں پر تنگ کردی گئی ہے۔ آئیے اس موقع پر انفرادی اور اجتماعی طور پر استغفار اور رجوع الی اللہ کا اہتمام کریں ۔ جماعت اسلامی نے 22مارچ 2013ءبروزجمعة المبارک کو ملک بھر میں ”یوم استغفارودعا“ منانے کا اعلان کیاہے۔ اس ضمن میں درج ذیل نکات کااہتمام اور تذکیر مناسب ہوگی۔
i۔ توبہ ،استغفار اور رجوع الی اللہ کے لیے سب سے پہلے اپنی نیتوں کا استحضار فرمالیجیے۔ انفرادی و اجتماعی کوتاہیوں کا اعتراف ، حضوری قلب کے ساتھ اُس سے معافی ، خشوع و خضوع کی کیفیت ، ندامت کا احساس اور اللہ کی ناراضگی کا خوف اپنے اوپر طاری کیجئے جو یقیناً اللہ کی رحمت کو جوش میں لانے کا سبب بنے گا۔
ii۔ حالات کی خرابی ، حکام کی بد اعمالی ، نظام کی فرسودگی اپنی جگہ ....مگر یہ بھی درست ہے کہ اس معاشرے کی اکائی (Unit)یعنی فرد جس میں ہم سب شامل ہیں اپنے حصہ کا کام درست نہیں کررہی ۔ اپنی تمام تقاریر ،گفتگوﺅں ،مجالس میں عوام الناس کو اس احساس ذمہ داری کی طرف متوجہ کیا جائے کہ وہ زندگی کے جملہ معاملات میں قرآن وسنت کا اتباع اور اخلاق حسنہ کا اہتمام کریں۔
iii۔ بدترین معاشی ، معاشرتی اور سیاسی حالات میں قوم نئے انتخابات کی طرف جاری ہے ۔ اس موقعہ پر کی جانے والی سرگرمیوں میں اس بات کو نمایاں کیا جائے کہ حالات صرف چہرے اور پارٹیوں کے بدلنے سے نہیں بلکہ عوام کی خواہشات کے بدلنے سے تبدیل ہوں گے۔ روایتی سیاستدان، آزمائے ہوئے افراد ، خاندانی سلسلوں اور جھوٹے دعوﺅں کے سراب کے بعد بننے والی حکومت ملک پر چھائے ہوئے آسیب سے نجات نہیں دلا سکتی ۔ متوسط ، دیانت دار اور مضبوط کردار کے حامل افراد اور پارٹیاں ہی عملاً تبدیلی لاسکیں گے ۔ آزمائے ہوﺅں کو بار بار آزمانا اپنے آپ کو دھوکہ دینے کے مترادف ہے۔
مرکزی میڈیا سیل اور آئی ٹی سے اس دن /مہم کے حوالے سے نعرے، سلوگن ،پوسٹر جاری کردیے جائیں گے۔
iv۔ ہر مقامی جماعت /یونین کونسل کی سطح پر جمعہ کی نماز کسی مرکزی جگہ (Public Place)پر ادا کی جائے گی۔ لوگ چادریں اور جائے نماز ساتھ لے کر آئیں گے ۔ مقامی جماعت شامیانے اور ساﺅنڈ سسٹم کا اہتمام کرے گی ۔ خطبات جمعہ کا موضوع توبہ و استغفار ہوگا۔ جسے ’اجتماعی دعا‘کے نام سے نمایاں کیا جائے گا۔
v۔ موقعہ کی مناسبت سے ہر مقامی جماعت ملک کے موجودہ حالات اور اجتماعی استغفار کی ضرورت و اہمیت پر مبنی تحریر بڑے پیمانے پر تیار کرکے گھروں ، دفاتر ،بازاروں اور مقامات جمعہ پر تقسیم کرے گی ۔ اگر یہ کام مقامی نمائندوں اور جماعت کے گروپ لیڈر ز کے نام سے ہوتو زیادہ بہتر ہے۔
vi۔ مذکورہ کاموں کے علاوہ اس دن اور مقصد کی مناسبت سے ذیلی ، صوبائی ، ضلعی نظم کو ئی بھی سرگرمی یا کام خود طے کرسکتاہے مگر اس میں سب سے بنیادی امر یہی پیش نظر رہے کہ اسے روایتی تنظیمی سرگرمی بنانے کے بجائے شعوری طور پر دینی اور عوامی رنگ دیا جائے۔
اللہ تعالیٰ اپنی رحمت کو اس دھرتی کی طرف متوجہ فرمائے اور ہم سب کے حامل پر رحم فرماتے ہوئے ہمارے مستقبل کو محفوظ ، روشن اور پاکیزہ بنائے،آمین۔


والسلام
خاکسار
(لیاقت بلوچ )
قیم جماعت اسلامی پاکستان

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں

سوشل میڈیا لنکس