Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

توانائی کے بحران کاخاتمہ


          جماعت اسلامی توانائی کے بحران کے خاتمے کے حسب ذیل اقدامات کرے گی ۔

فوری اقدامات :

          صرف چھ ماہ کی مدت میں تیز رفتار عمل کے ساتھ موجودہ 20ہزارمیگاواٹ بجلی کی صلاحیت کے جنریشن یونٹس کا100فیصد استعمال یقینی بنایا جائے گا۔ فوری اقدامات حسب ذیل ہیں:

·        جنریشن یونٹس کو واجبات کی بر وقت ادائیگیوں اور گیس اور پیٹرولیم کی سپلائی یقینی بنانا۔

·        بجلی چوری اور لائن لاسز پر کنٹرول ۔

·        بڑے بڑے نادہندگان سے وصولیاں ۔

·        بجلی سپلائی کرنے والے اداروں کے شاہانہ اخراجات میں کمی اور کرپشن کا خاتمہ

·        بجلی کی بچت کے مناسب اقدامات کئے جائیں گے۔

وسط مدتی اقدامات :(دوسال دورانیہ )

·        ایران اور وسط ایشیا سے گیس اور بجلی کا فوری حصول

·        چین سے بھی بجلی کا حصول

·        توانائی کے جاری پراجیکٹس کی ہنگامی بنیادوں پر تکمیل۔

مستقل اقدامات :  (دس سال دورانیہ )

·        قومی اتفاق رائے سے 5ڈیموں کی تعمیر

·        نہروں ،آبشاروں ،پہاڑی دریاں کے تمام پوٹینشل مقامات پر پن بجلی پیدا کی جائے گی

·        کوئلے سے بجلی بنانے کے لیے ملکی سائنس دانوں اور چین کی معاونت سے پیش رفت ۔

·        گھارو، کیٹی بندر اور دیگر مقامات پر ہوا سے بجلی بنانے کے پراجیکٹس ۔

·        شمسی توانائی کے چھوٹے اور بڑے پراجیکٹوں کاآغاز اور تنصیب کی کاسٹ کم کرنے کی کوشش ۔

·        ایٹمی اور جیوتھرمل توانائی کو استعمال میں لایا جائے گا۔

          جماعت اسلامی پاکستان صرف دس سالوں میں ملک کو 50000میگاواٹ بجلی پیدا کرنے کی استعداد سے مالا مال کردے گی ، انشاءاللہ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس