Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

مہنگائی کا خاتمہ


اشیا ئے صرف کی قیمتوں میں مسلسل اضافے اور کمر توڑ مہنگائی نے عوام کا جینا دوبھر کر دیا ہے اس وقت عام آدمی کا سب سے بڑا مسئلہ مہنگائی ہے۔ جماعت اسلامی مہنگائی کے خاتمے کے لیے حسب ذیل اقدامات کرے گی۔
• ٹیکس نظام میں انقلابی تبدیلی لائی جائے گی اور غریب عوام پر بالواسطہ ٹیکسوں کا بوجھ کم سے کم کیا جائے گا۔جی ایس ٹی کا مکمل خاتمہ کیا جائے گا۔
• چھ اشیائے صرف ا ٓٹا، چینی،گھی، چاول،دالیں اور چائے کی پتی کی قیمتوں میں کم ازکم 20فیصد کمی کی جائے گی۔ اور ان اشیاءکی معقول سپلائی کو بھی یقینی بنایا جائے گا۔
• سبزیوں اور پھلوں کو کھیت و باغ سے صارفین تک پہنچانے میں شامل درمیانی واسطوں کو کم کر کے قیمتوں میں کمی کی جائے گی۔ نیز ہفتہ وار سستے بازاروں کے قیام کی حوصلہ افزائی کی جائے گی۔
• بجلی گیس کے بلوں میں شامل تمام ٹیکسوں کے خاتمے ، بجلی چوری اور لائن لاسز پر قابو اور نا دہندگان سے وصولیوں کے نتیجہ میں بجلی گیس کو 30فیصد سستا کریں گے۔
• بڑے ذخیرہ اندوزوں اور نا جائز منافع خوروں کے خلاف بامقصد لائحہ عمل اختیار کیا جائے گا۔
• قیمتوں کے تعین اور نگرانی کے لیے اراکین پارلیمنٹ عدلیہ وانتظامیہ کے نیک نام سابق افسران علماء،وکلاء،صحافیوں اور صارفین کے نمائندوں پر مشتمل ہر سطح پر پرائس کنٹرول کونسلیں قائم کی جائیں گی۔
• تحصیل کی سطح پر صارفین عدالتیں قائم ہوںگی ۔ اور ان کے فیصلوں پر مکمل عمل درآمد کے لیے قانون سازی کی جائے گی۔
• پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کے تعین کے لیے اراکین پارلیمنٹ اور تمام سٹیک ہولڈ رزکے نمائندوں پر مشتمل کمیشن قائم ہوگا۔ پیٹرولیم پر ناروا ٹیکسوں ،ناجائز منافع کے خاتمہ اور فارمولا کی اصلاح کے ذریعے قیمتوں کو عام آدمی کی دسترس میں رکھا جائے گا۔
• مہنگائی کے تناسب سے تنخواہوں میں اضافے کا ایک مستقل قانون بنایا جائے گا۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں









سوشل میڈیا لنکس