Jamaat-e-Islami Pakistan | English |

خصوصی بلوچستان پیکج


o۔      صوبے کے ایک کروڑ عوام کو تحفظ زندگی ، حق روز گار اور بنیادی ضروریات زندگی کی فراہمی کے ذریعے ترقیاتی پراجیکٹس ملک کے دوسرے حصوں کی سطح تک لانے کے لئے ہنگامی اقدامات کیے جائیں گے اس سلسلے میں کوئٹہ کے علاوہ دیگر شہروں کو بھی ترقی دے کر ماڈل شہر بنایا جائے گا۔

o۔       73ءکے آئین اور 18ویں آئینی ترمیم پر عمل درآمد کے لئے ایک سال میں صوبائی حقوق و اختیارات کے لئے اقدامات کئے جائیں گے۔صوبے سے حاصل کردہ وسائل کا بڑا حصہ صوبے میں ہی استعمال ہوگا۔

o۔       گیس رائلٹی کا از سر نو تعین کرکے تین سال میں مکمل رقم کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا۔

o۔       چھ عشروں سے محرومی و پسماندگی اور وفاقی ومقتدرہ اداروں کی زیادتیوں کے ازالے کے لیے پارلیمنٹ و صوبائی اسمبلی حکومت کے مشترکہ جرگہ کے ذریعے اعتماد سازی کے لیے عملی اقدامات کئے جائیں گے۔

o۔       آئین کے تحت چھ فیصد ملازمتوں کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا۔

o۔       لاپتہ افراد کی بازیابی کے لیے فوری اقدامات کئے جائیں گے۔

o۔       سینڈک ،ریکوڈک ،گوادر اور چمالنگ ، ماربل و کرومائیٹ جیسے بڑے قیمتی منصوبوں کو اپنے ماہرین و انتظامی صلاحیت کے ذریعے چلایاجائے گا ۔

o۔       ساحل و سرحدی علاقوں کو ایران سے ترجیحی بنیادوں پر بجلی کی فراہمی نیزکا بندوبست کیا جائے گا۔ ضلع چاغی ،قلعہ عبداللہ اور ساحل مکران میں شمسی توانائی اور ہوا کے ذریعے بجلی کے پیداواری منصوبے بنائیں جائیں گے۔

o۔      خشک سالی کے ازالے کے لیے زراعت یا مالداری اور جنگلات کے لیے اقدامات کئے جائیں گے۔

o۔       بارڈر ٹریڈکی مقامی ضرورتوں کے پیش نظر نظرثانی کی جائے گی ۔

 
 
 
 
     ^واپس اوپر جائیں







سوشل میڈیا لنکس